اسرائیل کا خلیجی عرب ریاستوں کے ساتھ عدم جارحیت کے معاہدے کا عندیہ

اسرائیل نے وائٹ ہاؤس میں خلیجی عرب ممالک سے عدم جارحیت اور اقتصادی تعاون کے معاہدے کا عندیہ دے دیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے نیوز ویب سائٹ مڈل ایسٹ آئی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ اسرائیل نے وائٹ ہاؤس میں خلیجی عرب ممالک سے عدم جارحیت اور اقتصادی تعاون کے معاہدے کا عندیہ دے دیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق اسرائیلی وزیر خارجہ یسرائیل کاٹزنے کہا ہے کہ اسرائیل خلیجی عرب ریاستوں سے عدم جارحیت اور اقتصادی تعاون کے معاہدے پر دستخط کرنے کے لئے تیار ہے۔2 ہفتے قبل اسرائیل کا دورہ کرنے والے امریکی سیکریٹری خزانہ اسٹیون کا کہنا تھا کہ یہ انتہائی بہترین اقدام ہے۔ یسرائیل کاٹز نے بھی امریکی حکام سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ہدف یہ ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے دور اقتدار میں ہی خلیجی عرب ریاستوں کے ساتھ وائٹ ہاؤس کے لان میں معاہدے پر دستخط کیے جائیں۔ واضح رہے کہ سعودی عرب، متحدہ عرب امارات، بحرین اور عمان کے اسرائیل سے حالیہ سالوں میں روابط بڑھے ہیں۔خیال رہے کہ صرف 2 عرب ممالک اردن اور مصر کے اسرائیل کے ساتھ امن معاہدے موجود ہیں جبکہ حالیہ کچھ ماہ کے دوران اسرائیل کے دیگر خلیجی عرب ممالک کے ساتھ تعلقات میں بہتری آئی ہے۔

News Code 1895229

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 6 =