بھارتی پولیس کا صحافی پر مجرمانہ تشدد

بھارتی پولیس نے ریل کے ڈبوں کی پٹری سے اترنے کی کوریج کرنے والے صحافی کو پہلے جائے وقوعہ پر مارا پیٹا پھر تھانے لے جا کر برہنہ کیا اور وحشیانہ تشدد کا نشانہ بناتے رہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے بھارتی میڈیا کےحوالے سے نقل کیا ہے کہ بھارتی پولیس نے ریل کے ڈبوں کی پٹری سے اترنے کی کوریج کرنے والے صحافی کو پہلے جائے وقوعہ پر مارا پیٹا پھر تھانے لے جا کر برہنہ کیا اور وحشیانہ تشدد کا نشانہ بناتے رہے۔ اطلاعات مطابق بھارتی ریاست اتر پردیش کے شہر شاملی میں ٹرین کے ڈبے اترنے کے واقعے کی ویڈیو بنانے والے مقامی خبر رساں ایجنسی کے صحافی امیت شاہ کو معمولی تلخ کلامی پر وحشیانہ تشدد کا نشانہ بنایا اور تھانے لے گئی۔ تھانے میں ایس او ایچ سمیت پولیس ٹیم نے صحافی امیت شاہ کو زبردستی برہنہ کیا اور انسانیت سوز تشدد کا نشانہ بنایا، پولیس اہلکاروں نے اسی پر بس نہیں کیا بلکہ صحافی کے منہ پر پیشاب کیا اور صحافی کو کسی بھی صورت میں رہا کرنے سے انکار کردیا۔واقعہ کی اطلاع ملتے ہی صحافیوں کی بڑی تعداد تھانے پہنچ گئی اور پولیس اہلکاروں کیخلاف مقدمہ قائم کرنے کا مطالبہ کیا، صحافیوں نے امیت شاہ کی ضمانت کی رہائی کا مطالبہ بھی کیا۔صحافیوں کے احتجاج پر صوبائی انتظامیہ نے ایس ایچ او راکیش اپادھیا اور کانسٹیبل سنجے پنور کو معطل کر کے واقعہ کی تحقیقات کا حکم دے دیا۔ آئی جی پولیس نے صوبائی حکومت کی ہدایت پر انکوائری کمیٹی تشکیل دے دی ہے۔

News Code 1891317

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 3 =