پاکستان میں حملے پر سوال اٹھانے والوں کو طیارے کے ساتھ باندھ کر پھینک دیا جائے، بھارتی وزیر

بھارت کی حکمران جماعت کے ایک وزیر نے تجویز دی ہے کہ اپوزیشن کے جو رہنما پاکستان پر کیے گئے حملے پر سوالات اٹھائیں، انہیں اگلے مشن کے دوران جنگی طیاروں کے نیچے باندھ کر بم کی طرح پھینک دینا چاہیے.

مہر خبررساں ایجنسی نے بھارتی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ بھارت کی حکمران جماعت کے ایک وزیر نے تجویز دی ہے کہ اپوزیشن کے جو رہنما پاکستان پر کیے گئے حملے پر سوالات اٹھائیں، انہیں اگلے مشن کے دوران جنگی طیاروں کے نیچے باندھ کر بم کی طرح پھینک دینا چاہیے.

بی جے پی کے صدر امیت شاہ سمیت پارٹی کے دیگر رہنماؤں نے سرحد پار کارروائی میں 250 سے زائد افراد کی ہلاکت کا دعویٰ کیا لیکن اپوزیشن نے اس تعداد کی تصدیق کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے الزام عائد کیا کہ مودی اس حملے کو سیاسی مقاصد کے حصول کے لیے استعمال کررہے ہیں۔ جس پر بی جے پی کے نائب وزیر خارجہ وی کے سنگھ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ’میرے خیال میں اگر بھارت دوبارہ اس طرح کا کوئی حملہ کرے تو اپوزیشن کے جو لوگ سوالات اٹھا رہے ہیں انہیں طیاروں کے نیچے باندھ دینا چاہیے تاکہ وہ ٹارگٹ کو خود دیکھ سکیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس سے بم پھینکتے وقت نہ صرف وہ ٹارگٹ کو دیکھ سکیں گے بلکہ واپس آنے سے پہلے انہیں بھی بم کی طرح گرایا جاسکے گا۔

خیال رہے کہ اس کارروائی کے بعد بھارتی حکومت نے بڑی تعداد میں جیشِ محمد سے تعلق رکھنے والے عسکریت پسندوں کی ہلاکت کا دعویٰ کیا تھا لیکن اس حوالے سے کوئی سرکاری اعداد و شمار جاری نہیں کیے گئے جبکہ پاکستان نے بھی کسی جانی نقصان کی تردید کی۔

News Code 1888661

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 6 =