حماس نے فلسطینی صدر کی جانب سے پارلیمنٹ تحلیل کرنے کے اعلان کو مسترد کر دیا

فلسطینی نظیم حماس نے صدر محمود عباس کی جانب سے پارلیمنٹ تحلیل کرنے کے اعلان کو مسترد کردیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے فلسطین الیوم کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ فلسطینی نظیم حماس نے صدر محمود عباس کی جانب سے پارلیمنٹ تحلیل کرنے کے اعلان کو مسترد کردیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق آزادی فلسطین کے لیے متحرک تنظیم حماس نے فلسطینی صدر محمود عباس کی جانب سے پارلیمنٹ کو تحلیل کرکے نئے انتخابات کرانے کے فیصلے کو مسترد کرتے ہوئے فلسطینی صدر کے فیصلے کو جانب دارانہ قرار دے دیا۔

حماس کی جانب سے جاری تازہ بیان میں کہا گیا ہے کہ صدر محمود عباس کا پارلیمنٹ تحلیل کرنے کا فیصلہ اپنی جماعت کے مفاد کو تحفظ دینے کی ایک کوشش ہے۔ حماس نے فلسطینی صدر کے فیصلے کی موجب بننے والی عدالت کو بھی سخت تنقید کا نشانہ بنایا۔ترجمان حماس کا مزید کہنا ہے کہ صدر محمود عباس نے جس دستور کونسل کے فیصلے کی روشنی میں اسمبلی تحلیل کرنے کا اعلان کیا ہے وہ کونسل بھی دراصل صدر کے ہی اپنے ایک ذاتی فیصلے کی پیداوار تھی۔

فلسطین کے صدر محمود عباس کی جانب سے حماس کے سربراہ اسماعیل ہنیہ کی ملاقات کی دعوت مسترد کرنے پر کڑی تنقید کرتے ہوئے حماس کے ترجمان کا کہنا تھا کہ صدر محمود عباس نے ملاقات کی دعوت قبول نہ کرکے فلسطینیوں میں مزید تقسیم کو روکنے کا سنہری موقع ضائع کردیا۔

News Code 1886706

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 7 + 7 =