ایرانی قوم کے خلاف امریکی پابندیاں، اقتصادی دہشت گردی کا واضح نمونہ ہیں

اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر حسن روحانی نے 6 ممالک کے پارلیمانی سربراہی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایرانی قوم کے خلاف امریکی پابندیاں اقتصادی دہشت گردی کا واضح نمونہ ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی کے نامہ نگار کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے دارالحکومت تہران میں 6 ممالک ایران، پاکستان، ترکی، چين ، روس اور افغانستان کے پارلیمانی سربراہان کا  دہشت گردی کے خلاف باہمی تعاون کے دوسرے اجلاس کا آغاز ہوگیا ہے ۔ ایران کے صدر حسن روحانی نے 6 ممالک کے پارلیمانی سربراہی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایرانی قوم کے خلاف امریکی پابندیاں، اقتصادی دہشت گردی کا واضح نمونہ ہیں۔ صدر حسن روحانی نے دنیا کو درپیش چیلنجوں کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردی نے ایران کو بہت بڑا نقصان پہنچایا ہے اور ایران نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں بہت بڑی قربانی پیش کی ہے۔

صدر حسن روحانی نے کہا کہ ایرانی پارلیمنٹ کو دہشت گردی کا نشانہ بنایا گيا جس میں 72  افراد شہید ہوگئے جن میں ڈاکٹر شہید بہشتی بھی شامل ہیں۔ اس کے بعد ایران کے سابق صدر اور وزير اعظم کو دہشت گردوں نے شہید کردیا۔ اور ایران میں دہشت گردی پھیلانے والے دہشت گردوں کو آج امریکہ اور یورپی ممالک کی مکمل حمایت اور پذیرائی حاصل ہے۔

صدر حسن روحانی نے کہا کہ ایران کے سائنسی اور ایٹمی ماہرین کو دہشت گردوں نے نشانہ بنایا اور مغربی ممالک نے ان دہشت گردوں کو مدد فراہم کی۔

صدر حسن روحانی نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف امریکہ کی متضاد پالیسی کی وجہ سے دہشت گردی کو فروغ ملا اور امریکہ آج بھی دہشت گردی اور دہشت گردوں کا اصلی حامی ملک ہے۔ امریکہ کی ایرانی عوام کے خلاف اقتصادی پابندیاں در حقیقت امریکہ کی اقتصادی دہشت گردی کا واضح نمونہ ہیں۔ امریکہ کا ماحولیات کے معاہدے اور مشترکہ ایٹمی معاہدے اور دیگر معاہدوں  سے خارج ہونا اس بات کا مظہر ہے کہ امریکہ عالمی سطح پر سیاسی، سماجی ، عسکری اور اقتصادی شعبوں میں دہشت گردی کی آشکارا سرپرستی کررہا ہے۔

صدر حسن روحانی نے کہا کہ دہشت گردی کا مقابلہ کرنے کے لئے عالمی سطح پر امریکہ کو لگام دینا بہت ضروری ہے اور اگر ہم نے باہمی اتحاد کے ذریعہ امریکہ کی منہ زوری کا مقابلہ نہ کیا تو امریکہ پوری دنیا کے لئے بہت بڑا خطرہ بن جائےگا ۔

News Code 1886275

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 9 =