ایمنسٹی انٹرنیشنل نے آنگ سان سوچی سے اعزاز واپس لے لیا

میانمار کی رہنما آنگ سان سوچی سے ایمنسٹی انٹرنیشنل نے میانمار میں مسلمانوں کے قتل عام پر خاموش رہنے پر" ضمیر کی سفیر" کا اعزاز واپس لے لیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق میانمار کی رہنما آنگ سان سوچی سے ایمنسٹی انٹرنیشنل نے میانمار میں مسلمانوں کے قتل عام پر خاموش رہنے پر" ضمیر کی سفیر" کا اعزاز واپس لے لیا ہے۔ ایمنسٹی انٹرنیشنل کے سربراہ کومی نائڈو نے میانمار کی رہنما آنگ سان سوچی سے  " ضمیر کی سفیر" کا اعزاز واپس لیتے ہوئے کہا ہے کہ آنگ سان سوچی روہنگیا مسلمانوں پر مظالم رکوانے میں ناکام رہی ہیں۔ ایمنسٹی انٹرنیشنل کے سربراہ نے کہا کہ آنگ سان سوچی امید، حوصلے اور انسانی حقوق کی علمبردار نہیں رہیں، اس لئے ان کو 2009 میں دیا گیا " ضمیر کی سفیر" کا ایوارڈ واپس لے رہے ہیں۔

واضح رہے کہ آنگ سان سوچی کو ایمنسٹی انٹرنیشنل کی جانب سے 15 سالہ گھریلو نظر بندی کے دوران " ضمیر کی سفیر" کا ایوارڈ دیا گیا تھا تاہم سوچی کو روہنگیا مسلمانوں کی نسل کشی کو نظر انداز کرنے اور خاطر خواہ حل پیش نہ کرنے پر یہ اعزاز واپس لے لیا گیا ہے۔

News Code 1885580

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 9 + 8 =