سعودی عرب نے ملک میں مظاہروں پر پابندی عائد کردی ہے

سعودی عرب کےحکام نے دیگر عرب ممالک میں ہونے والے عوامی مظاہروں کے پیش نظر سعودی عرب میں حکومت خلاف مظاہروں پر پابندی عائد کردی ہے جبکہ شیعہ کمیونٹی نے اغیر مقدمہ چلائے افراد کو آزاد کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے رائٹرز کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ سعودی عرب کے ڈکٹیٹر حکام نے عرب ممالک میں ہونے والے عوامی مظاہروں کے پیش نظر سعودی عرب میں حکومت خلاف مظاہروں پر پابندی عائد کردی ہے۔ سعودی حکام نے شیعہ برادری کے مظاہروں کے بعد ملک میں مظاہروں اور جلوسوں پرمکمل پابندی عائد کرنے کا اعلان کر دیا ہے۔شیعوں نے سعودی شہر قطیف میں سعودی حکام کے خلاف زبردست مظاہرے کئے ہیں سعودی عرب کے مشرقی علاقوں میں شیعوں نے گزشتہ چند ہفتوں کے دوران کئی مظاہرے کیے ہیں اور وہ بغیر مقدمہ چلائے قید میں رکھے گئے افراد کی رہائی کا مطالبہ کرتے رہے ہیں انھوں نے سعودی عرب میں انسانی حقوق کی حفاظت، جمہوریت اور آزادی کا مطالبہ کیا ہے۔سعودی وزارت داخلہ نے ملک بھر میں کسی بھی قسم کے مظاہرے اور مارچ کرنے پر بھی پابندی لگادی ہے۔

News Code 1267625

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 7 + 3 =