اسرائیل لبنان میں سیاسی رہنماؤں کے قتل میں ملوث ہے

حزب اللہ لبنان کے سربراہ سیدحسن نصر اللہ نےکہا ہے کہ اسرائیل لبنان میں سیاسی رہنماؤں کے قتل میں ملوث ہے اور ملک میں خانہ جنگی چاہتاہے

مہرخبررساں ایجنسی نے المنار ٹی وی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ حزب اللہ لبنان کے سربراہ سیدحسن نصر اللہ نے عالمی یوم القدس کے موقع پر لبنانی عوام سے خطاب کرتے ہوئےکہا ہے کہ اسرائیل لبنان میں سیاسی رہنماوں کے قتل میں ملوث ہے اور ملک میں خانہ جنگی چاہتاہے بیروت میں یوم القدس کے موقع پر ایک عظيم ریلی کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے سید حسن نصراللہ نے مخالف دھڑوں سے اپیل کی کہ وہ صدارتی انتخاب سے متعلق بحران ختم کرنے کے طریقہ کار پر رضامند ہوجائیں۔حزب اللہ کے سربراہ نے کہا کہ اسرائیل لبنان میں قومی اتفاق رائے سے صدر کا انتخاب نہیں چاہتا۔اور اس سلسلے میں امریکہ اسرائیل کی مدد اورپشت پناہی کر رہا ہےانھوں نے کہا کہ اسرائیل ایسے صدر کا انتخاب چاہتا ہے جو مزاحمت ختم کردے۔ سیدحسن نصر اللہ نے کہا کہ اگر اتفاق رائے سے صدر منتخب نہیں کیاجا سکتا تو ملکی آئین میں ترمیم کر کے عوام کو براہ راست صدر منتخب کرنے کا اختیار دیا جانا چاہیے۔انھوں نے کہا کہ امریکہ اور اس کے اتحادی مغربی ممالک میں عوامی ریفرنڈم کراتے ہیں لیکن لبنان اور فلسطین میں وہ عوامی انتخابات کی کیوں مخالفت کرتے ہیں انھوں نے کہا کہ امریکہ جمہوریت اور حقوق انسانی کے بارے میں مبہم ، متضاد اور غلط پالیسی پر قائم ہے

 

News Code 563903

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 9 =