ایران نے سمندری حدود کی خلاف ورزی پرامارات کے جہاز کو اپنی تحویل میں لے لیا

اسلامی جمہوریہ ایران نے سمندری حدود کی خلاف ورزی کرنے اور ایرانی ماہیگيروں پر فائرنگ کرکے دو افراد کو شہید کرنے کے جرم میں متحدہ عرب امارات کے بحری جہاز کو اپنی تحویل میں لے لیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران نے سمندری حدود کی خلاف ورزی کرنے اور ایرانی ماہیگيروں پر فائرنگ کرکے دو افراد کو شہید کرنے کے جرم میں متحدہ عرب امارات کے بحری جہاز کو اپنی تحویل میں لے لیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق متحدہ عرب امارات کی جانب سے ایرانی ماہی گیروں کی کشتیوں پر فائرنگ کے نتیجے میں دو افراد کی شہادت اور ایک کشتی کو تحویل میں لینے کے جواب میں ایرانی کے بحری سرحدی محافظوں نے ایک اماراتی جہاز کو عملے سمیت تحویل میں لے لیا ہے۔

 ایرانی وزارت خارجہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ اماراتی بحری جہاز کو سرحد کی خلاف ورزی پر تحویل میں لیا گیا ہے، مذکورہ کشتی ایرانی پانیوں میں داخل ہوگئی تھی جو عالمی قوانین کی خلاف ورزی ہے۔ جہاز کا عملہ مکمل طور پر محفوظ ہے۔

واضح رہے کہ حال ہی میں متحدہ عرب امارات نے اسرائیل سے سفارتی تعلقات کی بحالی کا اعلان کرتے ہوئے دونوں ممالک کے درمیان امن معاہدہ طے پانے کا اعلان کیا تھا جس پر ایران نے سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے معاہدے کو فلسطینی عوام اور عالم اسلام کے ساتھ غداری قرار دیا تھا۔

News Code 1902428

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 16 =