سعودی عرب کا پاکستانی وزیر اعظم کی عدم توجہ اوربے اعتنائی پر شدید برہمی کا اظہار

سعودی عرب کے حالیہ دورے کے دوران پاکستان کے وزير اعظم عمران خان کی سعودی عرب کے بادشاہ شاہ سلمان کے بارے میں عدم توجہ اور بے اعتنائی پر جنجال اور ہنگامہ برپا ہوگیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے طلوع نیوز کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ سعودی عرب کے حالیہ دورے کے دوران پاکستان کے وزير اعظم عمران خان کی سعودی عرب کے بادشاہ شاہ سلمان کے بارے میں عدم توجہ اور بے اعتنائی پر جنجال اور ہنگامہ برپا ہوگیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق پاکستانی وزیر اعظم جب مکہ اجلاس کے ہال میں داخل ہوئے تو سعودی بادشاہ کی احوال پرسی کرنے کے بعد گفتگو ترک کرکے خود آگے بڑھ گئےاورمترجم کو وہاں تنہا چھوڑدیا ۔ سعودی عرب کے بعض ذرائع کے مطابق عمران خان نے سفارتی آداب اور پروٹوکل کی آشکارا خلاف ورزی کی ہے اور پاکستانی وزیر اعظم کی اس رفتار پر اعلی سطح پر شدید اعتراض کیا گیا ہے۔ پاکستانی وزیر اعظم نے حال ہی میں مکہ میں سعودی عرب کے بادشاہ کی میزبانی میں اسلامی تعاون تنظیم کے سربراہی اجلاس ميں شرکت کی تھی۔  سعودی عرب کے بادشاہ نے مکہ میں امریکہ کی حمایت اورایران پر دباؤ قائم کرنے کے لئے تین اجلاس طلب کئے، ذرائع کے مطابق سعودی عرب تینوں اجلاسز میں اپنے شوم اہداف تک پہنچنے میں ناکام ہوگیا ۔ مکہ اعلامیہ کو عراق ، شام اور قطر نے واضح طور پر مسترد کردیا۔ عراقی صدر نے اس اعلامیہ پر حتی دستخط تک نہیں کئے۔  تجزیہ نگاروں نے بھی مکہ اجلاسز کو سعودی عرب کی خطے میں ناکام پالیسی کا حصہ قراردیا ہے۔

News Code 1891053

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 4 =