امریکہ کا فتح اللہ گولن کو ترکی کے حوالے کرنے پر غور

ترکی کے وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ترک صدررجب طیب اردوغان سے کہا ہے کہ امریکہ ترک جلاوطن دینی مبلغ فتح اللہ گولن کو ترکی کے حوالے کرنے پر غور کررہا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے آناتولی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ ترکی کے وزیر خارجہ مولود چاوش اوغلو نے کہا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ترک صدر رجب طیب اردوغان سے کہا ہے کہ امریکہ ترک دینی مبلغ فتح اللہ گولن کو ترکی کے حوالے کرنے پر غور کررہا ہے۔ اطلاعات کے مطابق ترک وزیر خارجہ نے دو ہفتے قبل ارجنٹینا میں ہونے والے جی 20 اجلاس کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ارجنٹینا میں ڈونلڈ ٹرمپ نے رجب طیب اردوغان کو کہا کہ وہ فتح اللہ گولن اور دیگر افراد کو ترکی کے حوالے کرنے پر غور کررہے ہیں۔ واضح رہے کہ ترک حکومت طویل عرصے سے ترکی میں ناکام فوجی بغاوت کا منصوبہ بنانے والے ترک مبلغ فتح اللہ گولن کی حوالگی کا مطالبہ کر رہی ہے، جو تقریباً 2 دہائیوں سے خودساختہ جلاوطنی اختیار کرکے امریکہ میں رہائش پذیر ہیں ، فتح اللہ گولن کو سعودی عرب کی حمایت بھی حاصل ہے۔

News Code 1886522

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 1 =