مرسی کی حکومت کے خاتمہ کے بعد پہلے پارلیمانی انتخابات کا اعلان

مصر کے الیکشن کمیشن نے مصر کے سابق صدر محمد مرسی کے خلاف فوجی بغاوت کے بعد پہلے پارلیمانی انتخابات کا اعلان کردیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے الیوم السابع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ مصر کے الیکشن کمیشن نے مصر کے سابق صدر محمد مرسی کے خلاف فوجی بغاوت کے بعد پہلے پارلیمانی انتخابات کا اعلان کردیا ہے۔مصر کے دارالحکومت قاہرہ میں نیوز کانفرنس کے دوران الیکشن کمیشن کے سربراہ ایمن عباس نےکہاکہ انتخابات کا انعقاد مختلف مرحلوں میں کیا جائے گا۔ پارلیمانی انتخابات کے لیے امیدوار یکم ستمبر سے اپنے کاغذات نامزدگی جمع کراسکیں گے۔ امیدواروں کے لیے کاغذات نامزدگی جمع کرانے کے لیے 12 دن مقرر کیے گئے ہیں۔

پارلیمانی انتخابات میں 17 اور 18 اکتوبر کو بیرون ملک مقیم لوگ حق رائے دہی استعمال کرسکیں گے۔ مصر میں پہلے مرحلے پر 14 صوبوں میں 18 اور 19 اکتوبر کو ووٹ ڈالے جائیں گے جب کہ دوسرے مرحلے میں دارالحکومت قاہرہ سمیت 13 صوبوں میں 22 اور 23 نومبر کو پولنگ ہوگی۔

مصر میں 2011 کے عوامی انقلاب کے بعد انتخابات کے نتیجے میں وجود میں آنے والی پارلیمان کے ایوانِ زیریں کو جون 2012 میں عدالت نے کالعدم قرار دے دیا تھا جس کےبعد سے ملک میں عوام کے حقیقی نمائندہ ایوان کا وجود نہیں۔

مصر کے موجودہ صدر عبدالفتاح السیسی کی جانب سے 2013 میں فوج کے سربراہ کی حیثیت سے ملک کے منتخب صدر محمد مرسی کی حکومت کا تختہ الٹنے اور بعد ازاں خود صدارت سنبھال لینے کے بعد ملک میں ہونے والے یہ پہلے پارلیمانی انتخابات ہوں گے۔ انتخابات کا انعقاد رواں سال مارچ میں ہونا تھا لیکن مصر کی سپریم کورٹ کی جانب سے بعض انتخابی قوانین کو غیر آئینی قرار دینے کے باعث انتخابات ملتوی کردیئے گئے تھے۔ مصر کے موجودہ صدر السیسی کو سعودی  عرب کی بھر پور حمایت حاصل ہے مرسی کی حکومت کو ختم کرنے میں سعودی عرب نے اہم کردار ادا کیا تھا۔

News Code 1857796

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • captcha