مشہد اور قم کے بعد شیراز حرم اہلبیت اطہار (ع)  ہے

رہبر معظم انقلاب اسلامی حضرت آیت اللہ العظمی خامنہ ای نے شیراز کے دینی تشخص کو قم کے تشخص کی مانند قراردیتے ہوئے فرمایا: شیراز علم و ہنر کامرکز اور اہلبیت اطہار علیہم السلام کا حرم ہے۔

مہرخبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق رہبر معظم انقلاب اسلامی حضرت آیت اللہ العظمی خامنہ ای نے شیراز کے دینی تشخص کو قم کے تشخص کی مانند قراردیتے ہوئے فرمایا: شیراز  علم و ہنر کامرکز اور اہلبیت اطہار علیہم السلام کا حرم ہے۔ صوبہ فارس کے لئے حکومت کے منظور شدہ امورکو جلد از جلد عملی جامہ پہنانا چاہیے

کابینہ کے اراکین نے شیراز میں رہبر معظم کی موجودگی میں ایک خصوصی اجلاس تشکیل دیا جس میں حکومت کے ترقیاتی پروگراموں کی پیشرفت کے بارے میں تفصیل پیش کی گئی ۔

رہبر معظم نے اس ملاقات میں تاکید کرتے ہوئے فرمایا: صوبہ فارس کے لئے حکومت نے جن ترقیاتی پروگراموں کو منظور کیا ہے انھیں جلد از جلد عملی جماہ پہنانا چاہیے تاکہ اس صوبہ کے مؤمن و متدین عوام صوبہ کی مشکلات کے حل کرنے کے سلسلے میں حکام کی سرگرم موجودگی کو مکمل طور پر محسوس کریں۔

رہبر معظم نے شیراز کے دینی تشخص کو قم کے تشخص کی مانند قراردیتے ہوئے فرمایا: شیراز  علم و ہنر کامرکز اور اہلبیت اطہار علیہم السلام کا حرم ہےصوبہ فارس اور شیراز شہر کا دینی اور معنوی پہلو پروگرام مرتب کرتے وقت توجہ کا مرکز رہنا چاہیے ذرائع ابلاغ بالخصوص ریڈيو، ٹی وی  کو بھی اس امر پر مکمل توجہ رکھنی چاہیے۔

رہبر معظم نے خشکسالی کا مقابلہ کرنے کے لئے حکومت کی تدابیرکو اچھا قراردیااور گذشتہ 40 سالوں میں 7 بار خشکسالی کے وقوع ہونےکی طرف اشارہ کرتے ہوئے فرمایا: اس سے معلوم ہوتا ہے کہ ایران میں خشکسالی کوئی اچانک اور کم نظير مسئلہ نہیں ہے اس کا مقابلہ کرنے کے لئے جامع تحقیقات اور پروگرام مرتب کرنا چاہیے اس سلسلے میں شیراز میں خشکسالی کے بارے میں ریسرچ سینٹر قائم کرنا ایک ضروری اور مؤثر قدم نظر آتا ہے۔

رہبر معظم نے اس سلسلے میں ہمسایہ ممالک میں اقتصادی میدان میں سرگرم ایرانیوں کے سرمایہ کو جذب کرنے کےقدم کو مفید اور ضروری قراردیتے ہوئے فرمایا: اس اقدام سےصوبہ میں اقتصادی اور صنعتی سرگرمیوں میں مزید رونق پیدا ہوگی۔

رہبر معظم نے صوبہ فارس کے قبائل کے مسائل اور مشکلات پر مکمل توجہ دینے پر تاکید کرتے ہوئے فرمایا: اس صوبہ میں مختلف میدانوں میں ممتاز اور باصلاحیت افراد کثیر تعداد میں موجود ہیں اور تمام وزارتخانوں کو اس عظیم انسانی ظرفیت سے بہتر اور زیادہ سے زيادہ استفادہ کرنے کے لئے درست پروگرام مرتب کرنا چاہیے۔

رہبر معظم نے صوبہ فارس میں حکومت کی طرف سے 3 پٹروکیمیکل مراکزتاسیس کرنے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے فرمایا: اس سلسلے میں صوبہ میں موجود با تجربہ ،مفید اور کارآمد انسانی وسائل سے استفادہ کرنا چاہیے۔

رہبر معظم نے شیراز میںحافظ شناسی اور سعدی شناسی کے تحقیقاتی مراکز کی تاسیس اور ہنر یونیورسٹی کے قیام کو لازمی قراردیتے ہوئے فرمایا: ہنر اگر دیانت کی روح کے ہمراہ ہو تو انسانی ، اسلامی اور انقلابی اقدار کی تبلیغ کا سب سے اعلی اور اہم ذریعہ بن سکتا ہے ۔

رہبر معظم نے تقوی کو خداوند متعال کی مسلسل مدد و نصرت کا باعث قراردیتے ہوئے فرمایا: پیشرفت وترقی حاصل کرنے اور تمام مشکلات پر غلبہ پانے کے لئےتقوی ، خدا وند متعال پرتوکل وبھروسہ ، ذمہ داری کا دائمی احساس، تدبیر ، پیہم تلاش و کوشش ضروری ہےاور دفاع مقدس نے اس حقیقت کو بہترین شکل میں ثابت کیا ہے۔

 

News Code 679626

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 4 =