عرب ممالک کا مکہ اجلاس میں ایران کے خلاف اور سعودی عرب کی حمایت میں اعلامیہ

خلیج فارس تعاون کونسل اور عرب ممالک نے مکہ اجلاس میں ایران کے خلاف اور سعودی عرب کی حمایت میں اعلامیہ صادر کیا ہے جس میں امریکہ کی مرضی کے مطابق اسرائیل کے بجائے ایران کو خطے کے لئے خطرہ قراردیا گیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی اسکائی نیوز کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ خلیج فارس تعاون کونسل اور عرب ممالک نے مکہ اجلاس میں ایران کے خلاف اور سعودی عرب کی حمایت میں اعلامیہ صادر کیا ہے جس میں امریکہ کی مرضی کے مطابق اسرائیل کے بجائے ایران کو خطے کے لئے خطرہ قراردیا گیا ہے۔

عرب ممالک کے اعلامیہ میں ایران پر زوردیا گیا ہے کہ وہ عرب ممالک میں بالواسطہ اور بلاواسطہ مداخلت بند کرکے اچھے ہمسایہ کی طرح عمل کرے۔ عرب ممالک نے سعودی عرب کی عراق، شام، یمن اور دیگر اسلامی ممالک میں مداخلت کو نظر انداز کرتے ہوئے ایران کی طرف سے یمن کے نہتے عربوں کی حمایت کی مذمت کی ہے۔

مکہ اعلامیہ میں امریکہ نواز عرب رہنماؤں نے یمن پر سعودی عرب کے وحشیانہ ہوائی اور میزائل حملوں کی مذمت کرنے کے بجائے یمنی فوج اور قبائل کے سعودی عرب پر میزائل حملوں کی مذمت کی ہے۔ عرب رہنماؤں کا کہنا ہے کہ یمنی عوام کو اپنی سرزمین کے دفاع کا کوئی حق نہیں انھیں سعودی عرب کی جارحیت اور بربریت کے سامنے تسلیم ہوجانا چاہیے۔

News Code 1890969

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 8 =