پاکستان نے امریکہ سے دہشت گردی کی مد میں 6 ارب ڈالر طلب کر لئے

پاکستان نے ایک بار پھر امریکہ سے دہشتگردی کے خلاف جنگ میں کئے گئے اخراجات کی مد میں 6 ارب ڈالر کے بقایاجات طلب کرلئے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ڈیلی پاکستان کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان نے ایک بار پھر امریکہ سے دہشتگردی کے خلاف جنگ میں کئے گئے اخراجات کی مد میں 6 ارب ڈالر کے بقایاجات طلب کرلئے ہیں۔  اطلاعات کے مطابق پاکستان کے مشیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ سے پیر کو وزارت خزانہ میں امریکی معاون وزیر خارجہ برائے جنوبی اور وسطیٰ ایشیا ایلس ویلز نے ملاقات کی اور اس اجلاس میں شریک ایک ذریعے نے بتایا کہ دیگر امور کے ساتھ ساتھ پاکستان نے دہشت گردی کے خلاف جاری جنگ کے اخراجات کے بقایا جات کی واپسی کا بھی مطالبہ کیا۔

ذرائع کے مطابق انہوں نے بتایا کہ پاکستان کا تخمینہ 6 ارب ڈالر کے قریب ہے تاہم امریکہ کے نزدیک یہ بقایاجات کم ہیں۔ جب ان سے استفسار کیا گیا کہ کیا آئندہ مالی سال کے بجٹ میں کولیشن سپورٹ فنڈ (سی ایس ایف) کے بقایاجات کو بھی مجموعی غیر ملکی آمدن میں شمار کیا جائے گا توان کا کہنا تھا کہ جب تک امریکہ کی جانب سے پاکستانی اخراجات کے بقایاجات کو باضابطہ طور پر تسلیم نہیں کر لیا جاتا اور ان کی ادائیگی کا ٹائم فریم نہیں طے پا جاتا، اس وقت تک اس رقم کو بجٹ میں غیرملکی آمدن میں نہیں دکھایا جاسکتا۔اس کے ساتھ ساتھ دونوں ممالک میں تجارت اور سرمایہ کاری کے فروغ پر بھی تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔ مشیر خزانہ نے بتایا کہ پاکستان اور امریکہ کے درمیان سرمایہ کاری اور تجارت کے فروغ کیلئے ماحول کو سازگار بنانے کی ضرورت ہے، دہشتگردی کیخلاف جنگ میں پاکستانی معیشت کو 123 ارب ڈالر کے نقصانات پہنچے ہیں جو اب تک جاری ہیں اور 76 ہزار شہریوں اور فوجی اہلکاروں نے جام شہادت نوش کیا ہے۔

News Code 1890140

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 5 =