نواز شریف کو 7سال قید کی سزا / کمرہ عدالت سے گرفتار

پاکستان کے دارالحکومت اسلام آباد کی احتساب عدالت نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کو العزیزیہ ریفرنس میں 7سال قید کی سزا سنا دی ہے جبکہ نواز شریف کو کمرہ عدالت سے ہی گرفتار کرلیا گیا ہے ۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایکس پریس  کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کے دارالحکومت اسلام آباد کی احتساب عدالت نمبر 2 کے جج ارشد ملک نے سابق وزیراعظم نواز شریف کے خلاف العزیزیہ اسٹیل ملز اور فلیگ شپ ریفرنسز  کا محفوظ فیصلہ سنایا۔ احتساب عدالت نے اپنے فیصلے میں نواز شریف کو العزیزیہ ریفرنس میں 7 سال قید اور 25 ملین ڈالر (ساڑھے 3 ارب روپے) جرمانہ کردیا ہے جب کہ سابق وزیراعظم کو فلیگ شپ ریفرنس میں بری کردیا ہے۔ فیصلہ سنائے جانے کے بعد نواز شریف کو کمرہ عدالت سے ہی گرفتار کرلیا گیا ہے۔ سابق وزیر اعظم کو عدالت سے اڈیالہ جیل منتقل کیا جائے گا، اس سلسلے میں عدالت کے عقب میں پہلے ہی بکتر بند گاڑیاں پہنچا دی گئی تھیں۔ اس موقع پر عدالت میں سابق وزیر اعظم نواز شریف کے ہمراہ ان کے بھتیجے اور پنجاب اسمبلی میں قائد حزب اختلاف حمزہ شہباز اور دیگر رہنما بھی موجود تھے۔

News Code 1886720

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 2 =