پاکستانی طالبان دہشت گرد آپریشن کے بعد افغانستان پہنچ گئے

افغانستان کے صدر اشرف غنی نے کہا ہے کہ افغان حکومت مفاہمتی عمل کے حوالے سے جاری کوششوں کے بارے میں محتاط انداز میں پر امید ہے پاکستانی طالبان دہشت گرد آپریشن ضرب عضب کے بعد افغانستان پہنچ گئے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے افغان ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ افغانستان کے صدر اشرف غنی نے کہا ہے کہ افغان حکومت مفاہمتی عمل کے حوالے سے جاری کوششوں کے بارے میں محتاط انداز میں پر امید ہے پاکستانی طالبان دہشت گرد آپریشن ضرب عضب کے بعد افغانستان پہنچ گئے ہیں۔ افغانستان کے صدر اشرف غنی نے کہا ہے کہ افغان حکومت مفاہمتی عمل کے حوالے سے جاری کوششوں کے بارے میں محتاط انداز میں پر امید ہے پاکستانی طالبان دہشت گرد آپریشن ضرب عضب کے بعد افغانستان پہنچ گئے ہیں۔ افغان پارلیمنٹ کے رکن، افغان اعلی امن کونسل اور کونسل آف مجاہدین کے ساتھ ملاقاتوں میں افغان صدر نے کہا کہ پاکستان میں فوجی آپریشن شروع ہونے کے بعد تحریک طالبان پاکستان کے دہشت گردوں نے افغانستان میں پناہ لے لی ہے۔ افغان حکومت ملک میں جاری تشدد کو مدنظر رکھتے ہوئے امن مذاکرات کیلیے شرائط کا تعین کر رہی ہے۔ پاکستان، امریکہ اور چین کے ساتھ ہونے والی دوطرفہ، سہ فریقی اور چار فریقی ملاقاتوں میں افغان حکومت کی شرائط سے اتفاق کیا گیا ہے۔ بین الاقومی برادری کو اس بات پر یقین ہے کہ افغانستان میں جاری جنگ کے کئی طول وعرض ہیں جس میں عالمی اور علاقائی دہشتگردوں کی قیادت میں شورش، حقانی نیٹ ورک، تحریک طالبان پاکستان، القاعدہ نیٹ ورک اور داعش شامل ہیں۔

News Code 1861100

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 2 =