افغانستان کے صوبے بادغیس کی ایک مسجد میں 1 نمازی شہید 15 زخمی

افغانستان کے صوبے بادغیس کی ایک مسجد میں نماز جمعہ کے دوران ہونے والے دھماکے میں ایک نمازی شہید اور 15 سے زائد زخمی ہوگئے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے افغان ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ  افغانستان کے صوبے بادغیس کی ایک مسجد میں نماز جمعہ کے دوران ہونے والے دھماکے میں ایک نمازی شہید اور 15 سے زائد زخمی ہوگئے۔

اطلاعات کے مطابق افغانستان کے صوبے بادغیث کے دارالحکومت کی ایک مسجد میں دھماکہ ہوا ہے۔ دھماکہ اتنا زوردار تھا کہ اس پاس کی عمارتیں لرز اُٹھیں اور گاڑیوں کے شیشے ٹوٹ گئے۔

ریسکیو ادارے نے امدادی کاموں کے دوران 20 کے قریب زخمیوں کو اسپتال منتقل کیا جہاں ایک نمازی کے شہید ہونے کی تصدیق کردی گئی جب کہ 15 زخمیوں کو داخل کرلیا گیا ہے۔

اسپتال انتظامیہ کے مطابق 4 زخمیوں کی حالت نازک ہے جس کے باعث ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ہے۔ طالبان اہلکاروں نے دھماکے کی جگہ کا گھیراؤ کرلیا ہے۔

تاحال کسی گروپ نے حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے تاہم طالبان کے اقتدار سنبھالنے کے بعد سے مسجدوں میں 5 سے زائد خودکش حملے ہوئے ہیں جن کی ذمہ داری داعش دہشت گردوں نے قبول کی ہے۔

News Code 1909821

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 7 + 6 =