امریکہ نے چین کی 28 کمپنیوں پر پابندی عائد کردی

امریکہ نے انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر چین کی 28 کمپنیوں اور افراد پر پابندیاں عائد کردی ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے رائٹرز کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ امریکہ نے انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر چین کی 28 کمپنیوں اور افراد پر پابندیاں عائد کردی ہیں۔ اطلاعات کے مطابق امریکہ نے چین میں ایغور مسلم اقلیتوں کے حقوق کی مبینہ خلاف ورزی کے واقعات سامنے آنے پر چین کی 28 کمپنیوں اور شخصیات کو بلیک لسٹ کردیا ہے۔ اس پابندی کے بعد یہ کمپنیاں اور افراد امریکی کمپنیوں سے اُس وقت تک تجارت نہیں کرسکیں گے جب تک وائٹ ہاؤس انتظامیہ اجازت نامہ جاری نہ کر دے۔

اس حوالے سے امریکی سیکرٹری خزانہ ولبور روز نے میڈیا کو بتایا کہ جن چینی کمپنیوں پر پابندی عائد کی ہے ان میں نگرانی کے آلات بنانے والی کمپنی ہک ویژن، مصنوعی ذہانت کی کمپنیاں میگوی ٹیکنالوجی اور سینس ٹائمز بھی شامل ہیں۔چین پر عائد نئی تجارتی پابندی پالیسی کو بیان کرتے ہوئے امریکی محکمہ خزانہ کے سیکرٹری نے مزید کہا کہ مسلم اقلیت ایغور کے انسانی حقوق سلب ہونے پر تشویش ہے۔ امریکا چین میں اقلیتوں پر ہونے والے وحشیانہ تشدد کو کسی صورت برداشت نہیں کرے گا۔ ذرائع کے مطابق میکسیکو کی سرحد پر دیوار تعمیر کرکے انسانی حقوق کی بڑے پیمانے پر خلاف ورزی کا ارتکاب کررہا ہے۔ امریکہ یمن، فلسطین، عراق، شام، افغانستان اور لیبیا میں بڑے پیمانے پر انسانی حقوق کی خلاف ورزی کررہا ہے۔

News Code 1894403

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 14 =