قاسم سلیمانی عراق میں موجود ہیں/ ایران نے عراقی سرزمین کی آزادی کے لئے خون بھی پیش کیا

عراق کی اسلامی تنظیم النجباء کے جنرل سکریٹری نے کہا ہے کہ سپاہ قدس کے سربراہ جنرل قاسم سلیمانی عراق میں ہیں اور اسلامی جمہوریہ ایران نے عراق کی سرزمین کو دہشت گردوں سے آزاد کرانے کے لئے خون بھی دیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے سومریہ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ عراق کی اسلامی تنظیم النجباء کے جنرل سکریٹری شیخ اکرم الکعبی نے کہا ہے کہ سپاہ قدس کے سربراہ جنرل قاسم سلیمانی عراق میں ہیں اور اسلامی جمہوریہ ایران نے عراق کی سرزمین کو دہشت گردوں سےآزاد کرانے کے لئے خون بھی دیا ہے۔

عراق کی اسلامی تنظیم النجباء کے سکریٹری جنرل نے اپنے ایک خطاب میں کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران کی سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی کے سربراہ میجر جنرل قاسم سلیمانی عراق میں موجود ہیں اور ایران کے فوجی مشیر بھی عراق میں موجود ہیں ۔ عراقی سرزمین  کو دہشت گردوں کے ناپاک وجود سے پاک کرنے کے سلسلے میں ایران نے عراق کی بڑی مدد کی ہے ۔ انھوں نے کہا کہ ایران نے صرف عراقی فوجیوں کو ہتھیار ہی فراہم نہیں کئے بلکہ ایران نے عراقی حکومت کی درخواست پر فوجی مشیر بھی فراہم کئے اور حتی عراقی سرزمین کو آزاد کرانے کے لئے خون بھی پیش کیا ہے اور بہت سے ایرانی عتبات عالیات کے دفاع کے سلسلے میں شہید بھی ہوگئے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ ایرانی فوجی مشیر عراقی حکومت کی درخواست پر عراق میں موجود ہیں اور اگر ایران کی حمایت اور مدد نہ ہوتی تو بغداد پر دہشت گردوں کا قبضہ ہوگیا ہوتا  لیکن ایران نے عراق کی مدد کرکے دہشت گردوں اور ان کے حامیون کے ناپاک عزائم کو خاک میں ملادیا ہے۔

News Code 1868114

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • captcha