امریکہ علاقہ میں جاری تشدد، بحران اور دہشت گردی کا اصلی ذمہ دار

اسلامی جمہوریہ ایران کے دارالحکومت تہران میں عارضی خطیب جمعہ نے مشرق وسطی میں جاری بحران، تشدد اور بدامنی کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ علاقہ میں جاری تشدد ، دہشت گردی اور بحران کا اصلی ذمہ دار امیرکہ ہے جو اسرائیل کو تحفظ فراہم کرنے کے لئے اسلامی ممالک میں دہشت گردی کے فروغ دے رہا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی اردوسروس کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے دارالحکومت تہران میں نماز جمعہ آیت اللہ موحدی کرمانی کی امامت میں منعقد ہوئی جس میں لاکھوں مؤمنین نے شرکت کی۔ نماز جمعہ کے عارضی خطیب نے مشرق وسطی میں جاری بحران، تشدد اور بدامنی کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ علاقہ میں جاری تشدد ، دہشت گردی اور بحران کا اصلی ذمہ دار امریکہ ہے جو اسرائیل کو تحفظ فراہم کرنے کے لئے اسلامی ممالک میں دہشت گردی کے فروغ دے رہا ہے۔

خطیب جمعہ نے کہا کہ دنیا جانتی ہے کہ دہشت گرد گروہوں کی تشکیل میں امریکہ، اسرائیل اور برطانیہ نے اہم کردار ادا کیا ہے اور انھیں اس سلسلے میں بعض علاقائی ممالک کی حمایت بھی حاصل رہی ہے۔

آیت اللہ موحدی کرمانی نے کہا کہ دہشت گردی کے فروغ میں امریکہ کا اہم ہاتھ ہے جس نے ترکی میں دہشت گردوں کی تربیت کے لئے کیمپ قائم کئے اور انھیں پیشرفتہ ہتھیاروں سے مسلح کیا۔ انھوں نے کہا کہ امریکہ شام کی حکومت کو دہشت گردوں کے ذریعہ گرا کر اسرائیل کو تحفظ فراہم کرنا چاہتا ہے ۔

آیت اللہ موحدی کرمانی نے کہا کہ داعش کے خلاف امریکی اتحاد محض ایک دھوکہ اور فریب ہے کیونکہ امریکہ نے خود پہلے القاعدہ، پھر طالبان اور اب داعش کو تشکیل دیا ۔

آیت اللہ موحدی کرمانی نے کہا کہ  علاقائي قوموں کو امریکہ کے خطرے کو محسوس کرتے ہوئے اس کے اور اس کے اتحادیوں کے خلاف قیام کرنا چاہیے اور امریکہ کو خطے سے باہر نکال دینا چاہیے کیونکہ امریکہ ہی خطے میں جاری بحران کا اصلی ذمہ دار ہے۔

News Code 1865333

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • captcha