جرمنی میں داغستان کے پیشنماز داعش میں بھرتی کے جرم میں گرفتار

جرمنی میں روسی جمہوریہ داغستان سے تعلق رکھنے والےتیس سالہ امام مسجد کو شام اور عراق میں سرگرم وہابی دہشت گرد تنظیم داعش کے لیے دہشت گرد بھرتی کرنے کے الزام میں گرفتار کر لیا گیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے جرمنذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ جرمنی میں روسی جمہوریہ داغستان سے تعلق رکھنے والےتیس سالہ امام مسجد کو شام اور عراق میں سرگرم وہابی دہشت گرد تنظیم داعش کے لیے دہشت گرد بھرتی کرنے کے الزام میں گرفتار کر لیا گیا ہے۔ حکام کے مطابق یہ ملزم برلن میں مسلمانوں کی ایک مسجد کے ان دو رہنماؤں کا ساتھی ہے، جنہیں اسی سال جولائی میں گرفتار کیا گیا تھاجن پر شبہ تھا کہ وہ شام میں سرگرم جند الشام نامی ایک اور دہشت گرد گروپ کے حامی تھے۔ ملزم پرمبینہ طور پر شام میں داعش دہشت گردوں کے لیے رات کے وقت دیکھنے میں مدد کرنے والے فوجی آلات اور ٹیلی اسکوپک آلات کے حصول کے لیے کوششیں بھی کرتا رہا تھا۔
روس کو گزشتہ کئی عشروں سے اپنے ہاں قفقاز کے پہاڑی علاقوں میں مسلح دہشت گردوں کی منظم بغاوت کا سامنا ہے۔

News Code 1858898

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 1 =