برطانوی وزیر اعظم نے پارلیمنٹ سے شام میں داعش پر حملوں کی اجازت مانگ لی

برطانیہ کے وزیرِ اعظم ڈیوڈ کیمرون نے پارلیمان سے اپیل کی ہے کہ وہ ان کی حکومت کو شام میں داعش کے ٹھکانوں پر فضائی حملوں کی اجازت دے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ببرطانوی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ برطانیہ کے وزیرِ اعظم ڈیوڈ کیمرون نے پارلیمان سے اپیل کی ہے کہ وہ ان کی حکومت کو شام میں داعش کے ٹھکانوں پر فضائی حملوں کی اجازت دے۔ پارلیمان کے ارکان سے خطاب کرتے ہوئے برطانوی وزیرِاعظم نے کہا کہ شام میں داعش پر حملے برطانیہ کی سلامتی کے لیے ضروری ہیں۔ ڈیوڈ کیمرون کا کہنا تھا کہ شام میں داعش کے ٹھکانوں پر جاری بین الاقوامی اتحاد کے فضائی حملوں میں برطانیہ کو فوراً شریک ہونا چاہیے کیوں کہ برطانیہ کے لیے اپنی سلامتی کے تحفظ کے لیے دوسرے ملکوں پر انحصار کرنا غلط ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ شام میں داعش کو جتنا پنپنے کی مہلت دی جائے گی وہ دنیا کے امن کے لیے اتنا ہی بڑا خطرہ بنے گی۔وزیرِاعظم کیمرون نے ارکانِ پارلیمان کو بتایا کہ امریکی صدر براک اوبامہ اور فرانس کے صدر فرانسس اولاں نے شام میں جاری اتحادی فوج کی فضائی کارروائیوں میں برطانیہ کی شرکت پر زور دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ دونوں ملک برطانیہ کے قریب ترین اتحادی ہیں اور انہیں اس وقت برطانیہ کی مدد کی ضرورت ہے۔ واضح رہے کہ برطانیہ کے جنگی طیارے اس وقت عراق میں داعش کے ٹھکانوں پر جاری اتحاد کے فضائی حملوں میں شریک ہیں لیکن 2013ءمیں برطانوی پارلیمان کی جانب سے شام میں فضائی حملوں کی اجازت نہ دینے کی وجہ سے وہ شام میں کارروائی نہیں کرسکتے۔

News Code 1859885

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • captcha