پاکستان اور بھارت کے درمیان کشیدگی پر تشویش ہے، لکسمبرگ کے وزیر خارجہ

پاکستان کے دورے پر آئے ہوئے لکسمبرگ کے وزیر خارجہ جین اسیلبورن نے پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سے ملاقات کی اور مختلف امور پر تبادلہ خیال کیا۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ڈان اخبار کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کے دورے پر آئے ہوئے لکسمبرگ کے وزیر خارجہ جین اسیلبورن نے پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سے ملاقات کی اور مختلف امور پر تبادلہ خیال کیا۔

اس ملاقات کے بعد دونوں رہنماؤں نے مشترکہ پریس کانفرنس کی، اس دوران وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ملاقات میں پاکستان کے یورپین یونین میں مفادات اور ان سے تعلقات کو مزید مضبوط کرنے پر بات چیت ہوئی۔ انہوں نے بتایا کہ لکسمبرگ کے وزیر خارجہ کو ایف اے ٹی ایف سے متعلق اٹھائے گئے اقدامات کے بارے میں بھی آگاہ کیا گیا اور خطے کی حالیہ صورتحال پر بھی پاکستان کے موقف سے آگاہ کیا۔

اس موقع پر لکسمبرگ کے وزیر خارجہ نے کہا کہ محمود قریشی سے ملاقات کے دوران دونوں ممالک نے مستقبل میں اقتصادی اور معاشی تعاون کے فروغ پر اتفاق کیا ہے، اس کے علاوہ پناہ گزینوں کے معاملے پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ ان کا کہنا تھا کہ کشمیر کے واقعے اور 2 بھارتی جہاز کو گرانے کے بعد پاکستان اور بھارت کے درمیان پیدا ہونے والی حالیہ خطرناک کشیدگی پر پوری عالمی برادری نے تشویش کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ دنیا اس وقت مختلف تنازعات میں گھری ہوئی ہے اور کوئی بھی پاکستان اور بھارت کے درمیان مسلح کشیدگی نہیں چاہتا، میں اور یورپی یونین پاکستان اور بھارت کے درمیان انسداد دہشت گردی پر بات چیت کے لیے معاونت کرنے کو تیار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم وزیر اعظم عمران خان کی جانب سے بھارتی پائلٹ کی رہائی کے جذبے کو سراہتے ہیں اور ان کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔

News Code 1888664

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 8 =