ايك عراقي جج نے دو برطانوي فوجيوں كي گرفتاري كے وارنٹ جاري كئے ہيں

جج كے مطابق دو برطانوي فوجي عراقي پوليس اہلكار اور متعدد عراقيوں كي ہلاكت كے ذمہ دار ہيں

مہرخبررساں ايجنسي نے فرانسيسي خبررساں ايجنسي كے حوالے سے نقل كيا ہے كہ ان دونوں فوجيوں نے عربي لباس پہن ركھا تھا اور ان كے پاس سے دھماكہ خيز مواد پكڑا گيا تھا جس كي بنا پر ان كو گرفتار كركے بصرہ كي جيل ميں بند كرديا گيا تھاگرفتاري كے بعد برطانوي ٹينكوں نے بصرہ كي جيل پر دھاوا بول كر ان دونوں كو آزاد كروا ليا تھااس حملے ميں پانچ عراقي ہلاك ہوگئے تھے جس كے بعد بصرہ كے حالات سخت كشيدہ ہوگئے تھے اور بصرہ كے گورنر نےبھي برطانوي حكومت سے اس واقع پر معافي مانگنے كو كہا ہے اطلاعات كے مطابق برطانوي ، امريكي اور اسرائيلي خفيہ ايجنسياں عراق ميں قومي ، لساني اور مذہبي اختلافات ڈالنے كي كوششوں ميں مصروف ہيں اور انھوں نے شيعہ اور سني رہنماؤں كو ہلاك كرنے كا منصوبہ بنا ركھا ہے

News Code 233327

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 10 =