يورپ كو دي گئي مہلت ختم ہوگئي ہے // اصفہان كے كارخانے ميں UCF كي سرگرميوں كا دوبارہ آغاز IAEA كے معائنہ كاروں كي نگراني ميں ہوگا

وزارت خارجہ كے ترجمان نے كہا ہے كہ يورپ كے تين ممالك كو دي جانے والي مہلت اب ختم ہوگئي ہے اوراصفہان كے كارخانے ميں UCF كي سرگرميوں كا دوبارہ آغاز IAEA كے معائنہ كاروں كي نگراني ميں ہوگا //سكيورٹي كونسل دنيا كي انتہا نہيں ہے// يورپيوں كي تجاويز اور موقف ايران ميں موجود واقعيات كے پيش نظر ہونا چاہيے نہ كہ يہودي لابي سے متاثر

مہر خبررساں ايجنسي كے نامہ نگار كے مطابق وزارت خارجہ كے ترجمان حميد رضا آصفي نے كہا ہے كہ جمہوري اسلامي ايران اصفہان ميں اپني UCF كي سرگرمياں جلدشروع كر نے والا ہے اور ان سرگرميوں كا دوبارہ آغاز IAEA كے معائنہ كاروں كي نگراني ميں ہوگا جو اس وقت ايران ميں موجود بھي ہيں وزارت خارجہ كے ترجمان نے اس بات پر زور ديتے ہوئے كہ اصفہان كي كارخانے ميں UCF كي سرگرميوں كے دوبارہ آغاز يقيني ہے انھوں نے كہا كہاس سلسلے مراسلہ آج يا كل ويانا ميں IAEA كے دفتركو ارسال كرديا جائے گا ترجمان نے كہا كہ جمہوري اسلامي ايران نطنز سائٹ ميں يورينيم كي افزودگي كو رضاكارانہ طور پر روك دينے كا عمل جاري ركھے گا جناب آصفي نے كہا كہ ہميں افسوس ہے كہ ايسي خبريں موصول ہو رہي ہيں جن كے مطابق ايران كو پيش كي جانےوالي يورپي ملكوں كي تجاويز ميں ردو بدل كي جارہي ہے اور بظاہر يورپي ممالك  بيروني دباؤ كي وجہ سے اسي سلسلے ميں كسي ايك نكتہ پر متفق نہيں ہو سكے وزارت خارجہ كے ترجمان نے ايران كي ايٹمي فائيل كو سلامتي كونسل ميں لے جانے كے معاملے كو غير قانوني قرار ديا اور كہا كہ يہ حربہ پرانا ہوچكاہے لہذا يورپ كے لئے بہتر ہے كہ وہ اس بحث ميں نہ پڑے اور صيہونيوں كے مكر و فريب كے جال ميں نہ آئے ورنہ نقصان انھيں كا ہوگا

News Code 212904

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 0 =