عراق كےسابق ڈكٹيٹر صدر صدام پر عدالت ميں پيشي كے بعد حملہ ہوا ہے

عراق كے سابق ڈكٹيٹر صدر صدام پر ان وكلاء كے مطابق جمعرات كو عدالت ميں پيشي كے بعد ايك نامعلوم شخص نے حملہ كيا ہے

مہر خبررساں ايجنسي نے رائٹرز كے حوالے سے نقل كيا ہے كہ عراق كے سابق ڈكٹيٹر صدر صدامكے وكلاء نے ايك بيان ميں كہا كہ كارروائي ميں موجود ايك شخص نے صدام پرحملہ كر ديا اور اس كے بعد ان دونوں كے درميان گھونسوں كا تبادلہ ہوا صدام كے وكيل خليل دليمي اس جلسے ميں موجود تھے صدام كے خلاف انيس سو اكانوے ميں ملك كي شيعہ اور سني كرد آبادي پر ڈھائے جانے والے مظالم كي بنياد پر مقدمہ چلايا جا رہا ہے عدالت كے جج نے اس واقع ميں مداخلت نہيں كي عدالت صدام كے خلاف مقدمات كي تحقيق كررہي ہے بعض مبصرين كا خيال ہے كہ صدام كے جرائم ميں امريكہ برابر كا شريك ہے چونكہ صدام امريكي پٹھو تھا اس نے وہي كيا جو امريكہ چاہتا تھا لہذا صدام كے مقدمے ميں تاخير كي بڑي وجہ امريكہ ہے اس لئے كہ وہ راز فاش ہونے سے بوكھلا رہا ہے

 

News Code 212396

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 14 =