ايران نئے منتخب صدر كے بارے ميں وائٹ ہاؤس كے ترجمان كے بيان كو بوكھلاہٹ قرار ديا ہے

وزارت خارجہ كے ترجمان نے ايران كےنئے منتخب صدر كے بارے ميں وائٹ ہاؤس كے ترجمان مك كللان كے بيان كو بوكھلاہٹ پر مبني قرارديا ہے اور كہا ہے كہ امريكہ كے عريض و طويل ادارے بہت ہي معمولي مسائل كے بارے ميں بھي درست نتيجہ اخذ كرنے سے عاجز ہيں

مہر خبررساں ايجنسي كے مطابق وزارت خارجہ كے ترجمان حميد رضا آصفي  نے كہا كہ امريكہ چونكہ مختلف مسائل كے دلدل ميں پھنسا ہوا ہے اور بين الاقوامي سطح پر اسے زبردست شكست كا سامنا ہے جس كا واضح ترين نمونہ عراق ہے  ترجمان نے كہا كہ اس سے قبل بھي اعلان كيا گيا ہے كہ ايران كے نئے صدر كا امريكي جاسوسي لانہ كے واقعات سے كوئي تعلق نہيں ہے اور امريكي ذرائع ابلاغ نے بھي اس كي تائيد كي تھي كہ ايران كے نئے منتخب صدر تہران ميں امريكہ كے لانہ جاسوسي پر حملے ميں ملوث نہيں تھے آصفي نے كہا كہ وائٹ ہوس كے ترجمان مك كللان كا بيان بوكھلاہٹ پر مبني ہے انھوں نے كہا ہے كہ امريكہ كے عريض و طويل ادارے بہت ہي معمولي مسائل كے بارے ميں بھي درست نتيجہ اخذ كرنے سے بالكل عاجز ہيں

News Code 212021

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 8 =