مصري حكام نے 90 مشتبہ افراد كو گرفتار كر ليا ہے

مصر كے سياحتي مقام شرم الشيخ ميں ہونے والے كئي دھماكوں كے بعد مصري حكام نے 90 افراد كو گرفتار كر ليا ہے

مہر خبررساں ايجنسي نے فرانسيسي خبررساں ايجنسي كے حوالے سے نقل كيا ہے كہ مصر كے سياحتي مقام شرم الشيخ ميں ہونے والے كئي دھماكوں كے بعد مصري حكام نے 90 افراد كو گرفتار كر ليا ہے

يہ گرفتارياں مصري صدر حسني مبارك كے اس اعلان كے بعد عمل ميں آئي ہيں جس ميں انہوں نے اپنے ملك سے دہشت گردي كو ختم كر نے كے عزم كا اظہار كيا ہے

صدر حسني مبارك نے ان دھماكوں ميں زخمي ہونے والے افراد كي عيادت بھي كي اور انہيں يقين دلايا كہ وہ ان دھماكوں كے ذمہ دار افراد كو سزا دلوا كر رہي رہيں گے

جائے حادثہ پر امدادي كارروائياں جاري ہيں اور تباہ شدہ ہوٹلوں اور عمارتوں كي مرمت كا كام شروع كر ديا گيا ہےدھماكوں كے بعد بہت سے سياح علاقے سے فوراً چلے گئے جبكہ كچھ لوگوں كے وہيں ہيں

ان دھماكوں كے نتيجے ميں كم سے كم 83 افراد كے ہلاك ہونے كي تصديق ہو چكي ہے جبكہ ايك سو پچاس كے لگ بھگ لوگ زخمي ہوئے ہيں مرنے والوں كي اكثريت مصري ہے شرم الشيخ ميں ہونے والے حملوں كي القاعدہ نے ذمہ داري قبول كي ہے اقوام متحدہ سميت كي ممالك نے ان حملوں كي شديد مذمت كي ہے

 

News Code 210268

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 1 =