لندن ميں بم دھماكوں كي ذمہ داري مغربي طاقتوں پر عائد ہوتي ہے

لندن كے ميئر كين لوينگسٹن نے كہا ہے كہ لندن دھماكوں ميں ان مغربي طاقتوں كا ہاتھ ہے جنہوں نے پہلے اسامہ بن لادن جيسے لوگوں كو دہشت گردي كي تربيت دي اورامريكہ نے اسامہ بن لادن كو لوگوں كو مارنے، بم بنانےاور بم دھماكے كرانےكي تربيت دي امريكہ نے يہ نہيں سوچا كہ كل يہي اسامہ بن لادن اس كے خلاف بھي ہو سكتا ہے

مہر خبررساں ايجنسي نے ذرائع كے حوالے سے نقل كيا ہے كہ لندن كے ميئر نے كہا كہ لندن دھماكوں ميں مغربي طاقتوں كي مشرق وسطي كے بارے ميں پاليسوں كا بڑا عمل دخل ہے جو تيل كے حصول كے ليے وہاں حكومت كو تبديل كرتے ہيں

انہوں نے كہا كہ مغرب كي شہ پر جو كچھ مشرق وسطي ميں تين نسلوں سے ہو رہا ہے اگر وہ سب كچھ ہمارے ہاں ہوتا تو مجھے يقين ہے كہ ہم بھي كئي خود كش بمبار پيدا كر چكے ہوتے

لندن كے ميئر نے كہا كہ انہيں لندن بم حملوں كے مرتكب افراد سے كوئي ہمدردي نہيں ہے ليكن وہ ان حكومتوں كي بھي مذمت كرتے ہيں جو اپني غير منصفانہ خارجہ پاليسي كو آگے بڑھانے كے ليے بلاتفريق لوگوں كا قتل عام كرتي ہيں انہوں نے كہا كہ معاملات اس وقت زيادہ خراب ہو گئے جب امريكہ نے اسي كي دہائي ميں اسامہ بن لادن كو افغانستان ميں روسيوں سے لڑنے كے ليے بھرتي كيا اورامريكہ نے اسامہ بن لادن كو لوگوں كو مارنے، بم بنانےاور بم دھماكے كرانےكي تربيت دي امريكہ نے يہ نہيں سوچا كہ كل يہي اسامہ بن لادن اس كے خلاف بھي ہو سكتا ہے ميئركن لوينگسٹن نے كہا كہ لندن دھماكوں كے پيچھے مغرب كي دوہري پاليسيوں كا بھي ہاتھ ہے اور كہا كہ مغرب نے پہلے صدام كو خوش آمديد كہا اور ايران كے خلاف اس كي بھر پور فوجي مدد كي اور پھر خود ہي اس كو تخت و تاج سے محروم كرديا 

مبصرين لندن كے ميئر كے خيالات سے بڑي حد تك متفق ہيں كيونكہ دہشت گردي كي داغ بيل مغربي ممالك ميں پڑي ہے اور اسلام سے اس كا كوئي واسطہ نہيں ہے اور نہ ہي مسلمان اس قسم كے وحشيانہ اعمال كي حمايت كرتے ہيں اس قسم كي دہشت گردي وہي لوگ كررہے ہيں جو مغرب كے پروردہ يا ان كے زرخريد غلام ہيں يا اسرائيل جيسي حكومتيں كررہي ہيں جس كي پشت پناہي امريكہ اور برطانيہ جيسے مغربي ممالك كررہے ہيں بہر حال دہشت گردي كو جس رخ سے بھي ديكھا جائے اس رخ پر مغربي ممالك ہي نظر آئيں گے 

 

News Code 208941

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 7 =