القاعدہ نے ڈنمارك اور اٹلي كو بھي دھمكي دي ہے // يورپ پر وحشت و خوف و ہراس كے بادل چھا گئے ہيں // مغربي يورپ ميں سكيورٹي اداروں كو چوكنا كرديا گيا ہے

لندن ميں ہونے والے بم دھماكوں كي ذمہ داري قبول كرنے كے بعد القاعدہ نے ڈنمارك اور اٹلي كو بھي اسي طرح كي دھمكي دي ہے اس سے يورپ پر خوف و ہراس كے بادل چھا گئے ہيں

مہر خبررساں ايجنسي نے العربيہ ٹي وي كے حوالے سے نقل كيا ہے لندن ميں ہونے والے بم دھماكوں كے بعد اٹلي ، فرانس ، ہالينڈ ، جرمني ، ڈنمارك ، ہنگري اور اسپين نے اپنے اپنے ممالك ميں سكيورٹي اقدامات كرنے كا اعلان كيا ہے رائٹر نے نقل كيا ہے فرانس كے وزير اعظم نے كہا ہے كہ ملك ميں بالا ترين ريڈ الرٹ برقرار كرديا گيا ہے لندن ميں ہونے والے بم دھماكوں كي ذمہ داري القاعدہ كي طرف سے قبول كرنے اور ڈنمارك اور اٹلي كو القاعدہ كي طرف سےاسي طرح كي دھمكي ملنے كے بعد يورپ پر خوف و ہراس كے بادل چھا گئے ہيں

لندن آج سات بم دھماكوں سے لرز اٹھا يہ دھماكے لندن كے زير زمين ٹرين سٹيشنوں اور تين بسوں ميں ہوئے ہيں زخمي ہونے والوں كي تعداد 300 تك پہنچ گئي ہے  عيني شاہدوں كے مطابق ہلاك ہونے والوں كي تعداد كہيں زيادہ ہو سكتي ہےان دھماكوں كي اطلاع كے بعد لندن كےزير زمين ريلوے نظام كو بند كرديا گياہے

يہ دھماكے صبح دفتري اوقات شروع ہونے سے قبل ہوئے جس دوران ريلوے سٹيشنوں پر كافي رش ہوتا ہے دھماكوں كي اطلاع كے بعد زير زمين چلنے والي تقريباً تمام ٹرينوں كو روك ديا گياوزير اعظم ٹوني بليئر نے ان دھماكوں كو دہشت گردي كي واردات قرار ديا ہے

برطانوي حكام پر سكتہ طاري ہے ريلوے نظام كے بند ہوجانے كي وجہ سے لوگوں كو شديد مشكلات كا سامنا كرنا پڑا ہے بہت سي ٹرينيں زير زمين سرنگوں ميں رك گئيں اور ان ميں بيٹھے ہوئے لوگوں كو بھي شديد پريشاني كا سامنا ہےلندن اس وقت سنگين بحران سے دوچار ہے اور بہت سے ٹي وي اسٹيشوں نے اپني معمولي نشريات كو قطع كركے اپني توجہ برطانيہ كے حالات پر مركوز كرلي ہے

News Code 204267

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 2 =