ايران كے نئے منتخب صدر ڈاكٹر محمود احمدي نژاد نے اس بات پر تاكيد كي ہے كہ ہم يورپ سميت دنيا كے تمام ممالك كے ساتھ دوستانہ اورمنصفانہ تعلقات چاہتے ہيں

مہر خبر رساں ايجنسي كے نامہ نگار كي رپورٹ كے مطابقنئے منتخب صدر ڈاكٹر محمود احمدي نژاد نے اس بات پر زور ديا ہے كہ ہم يورپ سميت دينا كے تمام ملكوں كے ساتھ دوستانہ اورمنصفانہ تعلقات چاہتے ہيں  ڈاكٹر احمدي نژاد نے تہران ميں پارليمنٹ كے بعض اراكين  سے ملاقات ميں كہا كہ ہم مغربي ملكوں كو سفارش كرتے ہيں كہ وہ ايسا طرز عمل اور موقف اختيار كريں كہ ايراني قوم كا ذہن ان كے بارے ميں اس سے زيادہ مخدوش نہ ہو انہوں نے ايران كے حاليہ انتخابات كے بارے ميں مغربي حكومتوں كے متضاد رد عمل پر تنقيد كرتے ہوئے كہا كہ وہ كيسے جمہوريت اور عوامي رائے كے احترام كي دعويدار بن سكتي ہيں جبكہ وہ ايك ايسي قوم كے جمہوري طرز عمل پر حملہ كريں جس نے تين كروڑ كي تعداد ميں انتخابات ميں شركت كركے اپني جمہوريت پسندي كا بہترين ثبوت ديا ہے ايران كے نئے منتخب صدر ڈاكٹر احمدي نژاد  12 مرداد مطابق 4 اگست كو ايران كے صدر كي حيثيت سے حلف اٹھائيں گے

 

 

News Code 203153

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 6 + 12 =