اقوام متحدہ کی 81 افراد کا سرقلم کرنے  پرسعودی حکومت کی مذمت

اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے کمشنر نے 81 افراد کا سرقلم کرنے پر سعودی عرب کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ 81 افراد میں سے 41 افراد کا تعلق شیعہ برادری سے ہے جنھیں صرف 2011 اور 2012 میں مظاہروں میں شرکت کرنے کے جرم میں قتل کیا گيا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے فرانسیسی خبررساں ایجنسی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے کمشنرمیشل باشلہ نے 81 افراد کا سرقلم کرنے پر سعودی عرب کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ 81 افراد میں سے 41 افراد کا تعلق شیعہ برادری سے ہے جنھیں صرف 2011 اور 2012 میں مظاہروں میں شرکت کرنے کے جرم میں  قتل کیا گيا ہے۔ اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے کمشنر کا کہنا ہے کہ جن افراد کے سرقلم کئے گئے ہیں ان میں بعض کو ایسی عدالتوں میں سزا دی گئی ہے جہاں بین الاقوامی اور انسانی اصولوں کی رعایت نہیں کی جاتی۔ اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے کمشنر نے کہا کہ سعودی عرب کا یہ اقدام جنگی جرائم کے زمرے میں آسکتا ہے۔

اقوام متحدہ کے کمشنر نے کہا کہ سعودی عرب کا عدالتی نظام ، انصاف کی بنیادوں پر قائم نہیں بلکہ داعش کے دہشت گردانہ اصولوں قائم ہے۔

News Code 1910161

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 2 =