پاکستانی حکومت کے پاس سب کو نوکریاں دینے کے لئے پیسے نہیں

پاکستان کے وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ حکومت کے پاس اتنے پیسے نہیں کہ سب کو نوکریاں دے، نوجوانوں کو چاہیے کہ ہنر سیکھیں کاروبار کریں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایکس پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کے وزیراعظم عمران خان نے اسلام آباد میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت کے پاس اتنے پیسے نہیں کہ سب کو نوکریاں دے، نوجوانوں کو چاہیے کہ ہنر سیکھیں کاروبار کریں۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ مسلمانوں نے کئی سال تک دنیا کی امامت کی، مدینے کی فلاحی ریاست میں خواتین کو وراثت کا حصہ ملتا تھا، اور وہاں کوئی قانون سے بالا تر نہیں ہوتا تھا، فلاحی ریاست میں لوگوں کی فلاح و بہبود کے لیے کام کیا جاتا تھا، ہم نے بھی اسلامی اصولوں پر پاکستان کو کھڑا کرنا تھا، لیکن یہ افسوسناک ہے 1947میں جو ہمارا قبلہ تھا اس پر نہیں چل سکے۔

وزیراعظم نے کہا کہ جس نظریےکے تحت پاکستان بنا تھا ہم اس پر نہیں چلے، اور جوقوم اپنے نظریے سے ہٹتی ہے وہ کبھی کامیاب نہیں ہوسکتی، پاکستان ایک خواب کا نام تھا، اگر پاکستان کو آج عزت نہیں ملی تو اس کی وجہ صرف نظریہ سے ہٹ کر چلنا تھا، ریاست کو اپنے کمزور طبقے کی ذمہ داری لینی تھی لیکن ایسا نہ ہوسکا، جو قوم طاقتور کو چھوڑ کر کمزور کو سزا دے وہ تباہ ہوجاتی ہے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ علامہ اقبال نے جو خواب دیکھا ہم اس کیجانب گامزن ہیں، کل رحمت اللعالمین اتھارٹی پر کام کا آغاز کرنے جارہےہیں، نوجوانوں کو سیرت رسول (ص)اورزندگی کے اصولوں سےآگاہ کرنا ہے، حکومت کے پاس اتنے پیسے نہیں کہ سب کو نوکریاں دے،  نوجوانوں کو چاہیے کو ہنر سیکھیں کاروبار کریں، آئی ٹی ایک ایسہ شعبہ ہے جس سے نوجوان پیسہ کما سکتا ہے۔

News Code 1910024

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 0 =