طالبان کا افغانستان میں داعش پر قابو پانے اور داعش کے 600 دہشت گردوں کو گرفتار کرنے کا دعوی

افغانستان میں طالبان کے عبوری نائب وزیر اطلاعات ذبیح اللّٰہ مجاہد نے افغانستان میں داعش دہشت گردوں پر قابو پانے کا دعوی کرتے ہوئے کہا ہے کہ افغانستان میں داعش کے 600 دہشت گردوں کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے افغان ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ افغانستان میں طالبان کے عبوری  نائب وزیر اطلاعات ذبیح اللّٰہ مجاہد نے کابل میں پریس کانفرنسسے خطاب میں افغانستان میں داعش دہشت گردوں پر قابو پانے کا دعوی کرتے ہوئے کہا ہے کہ افغانستان میں داعش کے 600 دہشت گردوں کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔ انھوں نے کہا کہ داعش دہشت گرد افغانستان میں بہت زیادہ نہیں اور نہ ہی انہیں یہاں حمایت حاصل ہے۔ ذبیح اللّٰہ مجاہد نے کہا کہ طالبان مسلسل داعش کے خلاف کارروائیاں کر رہے ہیں۔ افغانستان میں موجود داعش ، عراق اور شام والے داعشی نہیں۔ یہاں موجود داعش دہشت گرد زیادہ تر مقامی افراد ہیں جو عراق، شام والے داعش سے متاثر ہیں۔   طالبان کے نائب وزیر اطلاعات نے کہا کہ افغانستان میں موجود داعش خراسان سے دیگر ممالک کو کوئی خطرہ نہیں ہے۔ امریکہ سے بات چیت کے لیے تیار ہیں۔ ذبیح اللہ مجاہد نے کہا کہ دنیا کو افغانستان میں طالبان حکومت کو تسلیم کرلینا چاہیے۔

News Code 1908798

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 13 =