چین نے افغان طالبان کو 10 لاکھ ڈالر کی امداد فراہم کردی/ 50 لاکھ  ڈالر مزید فراہم کرنے کا وعدہ

چین نے انسانی ہمدردی کی بنیاد پر افغانستان میں طالبان حکومت کو 10 لاکھ امریکی ڈالر کی امداد فراہم کی ہے اور مزید 50 لاکھ امریکی ڈالر دینے کا بھی وعدہ کیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے الجزیرہ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ چین نے انسانی ہمدردی کی بنیاد پر افغانستان میں طالبان حکومت کو 10 لاکھ امریکی ڈالر کی امداد فراہم کی ہے اور مزید 50 لاکھ امریکی ڈالر دینے کا بھی وعدہ کیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق  قطر میں چین کے وزیر خارجہ وانگ ایی سے طالبان حکومت کے ہم منصب ملا امیر اللہ متقی نے ملاقات کی تھی اور افغانستان کو درپیش مالی مشکلات سمیت سرحدوں کے تحفظ سے متعلق امور پر تبادلہ خیال کیا تھا۔

گزشتہ روز کی ملاقات کے بعد آج چین نے طالبان حکومت کے لیے 10 لاکھ امریکی ڈالر کی مالی امداد جاری کردی ہے جب کہ مزید 50 لاکھ کی امداد بھی جلد فراہم کی جائے گی۔

افغانستان میں طالبان حکومت کے نائب وزیر اطلاعات اور ترجمان طالبان ذبیح اللہ مجاہد نے 10 لاکھ امریکی ڈالر کی امداد موصول ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ امداد خاص طور پر ادویہ اور خوراک کی کمی کو پورا کرنے میں استعمال ہوں گی۔

اس سے قبل دوحہ میں ملاقات کے دوران نائب وزیراعظم ملا عبدالغنی برادر نے چین کے وزیر خارجہ کو یقین دہانی کرائی تھی کہ افغان سرزمین چین کے خلاف استعمال نہ ہونے کی ضمانت دیتے ہیں۔ ہمسائیہ ملک سے متصل سرحد کو محفوظ بنایا جائے گا۔

News Code 1908649

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 1 =