ہندوستان اور پاکستان کے زیر انتظام کشمیر میں 27 اکتوبر کی مناسبت سے ریلیوں اور احتجاج کا اہتمام

کشمیر پر بھارت کے قبضے کے خلاف آج 27 اکتوبر کو ہندوستان اور پاکستان کے زیر انتظام کشمیر میں احتجاجی ریلیوں کا اہتمام کیا گیا ہے۔ کشمیر میں 27 اکتوبر یوم سیاہ کے طور پر منایا جاتا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے جنگ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ کشمیر پر بھارت کے قبضے کے خلاف آج 27 اکتوبر کو ہندوستان اور پاکستان کے زیر انتظام کشمیر میں احتجاجی ریلیوں کا اہتمام کیا گیا ہے۔ کشمیر میں 27 اکتوبر یوم سیاہ کے طور پر منایا جاتا ہے۔ اطلاعات کے مطابق ہندوستان کے زیر انتظام کشمیر اور آزاد کشمیر میں تقریبات ، جلسے ، ریلیاں، جلوس اور مظاہرے کیے جا رہے ہیں۔ آزاد کشمیر حکومت کی جانب سے اس موقع پر تقریب منعقد کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔ یومِ سیاہ کے موقع پر ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر کمپلیکس مظفر آباد میں مرکزی تقریب ہو گی۔ ادھر بھارت کے زیر انتظام کشمیر میں بھی وادی کے علاقہ میں یوم سیاہ منانے کا اعلان کیا گيا ہے۔ پاسبان حریت کی جانب سے بھی آزاد کشمیر میں ریلیاں، جلسے، جلوس اور مظاہرے کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔

پاسبان حریت کے سربراہ عزیر غزالی کے مطابق کنٹرول لائن نیلم اور اٹھ مقام پر بھارتی فوجی مورچوں کے سامنے احتجاج کیا جائے گا۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ مظفر آباد، ہٹیاں بالا، مہاجر کیمپ، چھتر باغ اور دیگر علاقوں میں بھی بھارت کے خلاف احتجاج ہو گا۔

واضح رہے کہ کشمیر پر بھارت کے قبضے کے 74 سال مکمل ہونے پر پاکستان، آزاد و مقبوضہ کشمیر سمیت دنیا بھر کے کشمیری آج یوم سیاہ منارہے ہیں۔

1947 میں تقسیم ہند کے وقت ریاستوں کو اختیار دیا گیا کہ وہ استصوابِ رائے سے اپنے مستقبل کا فیصلہ کریں۔ کشمیریوں کی مقامی قیادت نے کشمیر کے پاکستان کے ساتھ الحاق کا فیصلہ کیا۔ مہاراجہ ہری سنگھ نے ہندو ہونے کی وجہ سے ساز باز کر کے ہندوستان کے ساتھ ایک غیر مصدقہ معاہدہ کیا جس کی قانونی و تاریخی حیثیت ثابت شدہ نہیں۔ بھارت نے 27 اکتوبر 1947 کو کشمیر میں عوامی بغاوت سے خائف مہاراجہ کی ایماء پر ریاستی عوام کے حق خودارادیت کو پامال کرتے ہوئے اپنی فوجیں سرینگر کے ہوائی اڈے پر اتاریں اور ریاست کشمیر کے بڑے حصے پر قبضہ کرلیا۔ بھارت کا یہ اقدام نہ صرف کشمیری عوام کے خلاف  کُھلی جارحیت تھا بلکہ اقوامِ متحدہ کے چارٹر کی بھی سنگین خلاف ورزی تھی۔ 74 سال گزرنے کے بعد آج بھی کشمیر کا مسئلہ بھارت اور پاکستان کے درمیان کشیدگی اور بحران کا اصلی سبب ہے پاکستان مسئلہ کشمیر کو اقوام متحدہ کی قرارداد کے مطابق حل کرانے کی تلاش کررہا ہے کہ لیکن اسے گذشتہ 74 سال میں کوئی کامیابی نہیں ملی۔ بھارت کشمیر کو اپنا اٹوٹ انگ سمجھتا ہے اور اس کا کشمیر پر مسلسل قبضہ جاری ہے۔

News Code 1908647

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 3 =