افغانستان کے موجودہ بحران اور بدامنی کا اصلی  ذمہ دار امریکہ ہے

اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ امریکہ گذشتہ 20 برس میں افغانستان پر قابض رہا اور وہ افغانستان کے موجودہ بحران اور بدامنی کا ذمہ دار ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ حسین امیر عبداللہیان نے افغانستان کے سابق صدر حامد کرزائی کے ساتھ ٹیلیفون پر گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ گذشتہ 20 برس میں افغانستان پر قابض رہا اور وہ افغانستان کے موجودہ بحران اور بدامنی کا اصلی ذمہ دار ہے۔

دونوں رہنماؤں نے اس گفتگو میں افغانستان کی موجودہ صورتحال کے بارے میں تبادلہ خیال کیا۔ ایرانی وزیر خارجہ نے کہا کہ  افغانستان میں جاری بحران کے خاتمہ کے لئے ہمہ گير اور وسیع بنیادوں پر حکومت کی تشکیل ضروری ہے ایسی حکومت جس میں افغانستان کے تمام گروہوں اور قبائل کی نمائندگی موجود ہو اور ایران افغانستان میں قائم ایسی حکومت کی اصولی بنیادوں پر حمایت کرےگا۔

ایرانی وزیر خارجہ نے کہا کہ ایران ایسے افغانستان کا خواہاں ہے جس میں جنگ و جدال اور دہشت گردی کا خاتمہ ہو۔ ایرانی وزیر خارجہ نے کہا کہ موجودہ شرائط کے پیش نظر ایران کی افغانستان کے ساتھ سرحدیں کھلی رہیں گی اور ایران و افغانستان کے درمیان تجارت کا سلسلہ جاری رہےگا۔

افغانستان کے سابق صدر حامد کرزائي نے بھی کہا کہ افغانستان میں ایسی حکومت کی تشکیل کے لئے افغان بزرگوں کی تلاش جاری ہے جو افغان عوام کے ارادوں پر مشتمل ہو اور جس میں افغان عوام کے تمام گروہوں منجملہ طالبان  اور قبائل کی نمائندگی موجود ہو۔ حامد کرزائی نے کہا کہ ہم ایران سے بھی درخواست کرتے ہیں کہ وہ ماضی کی طرح افغان عوام کی حمایت کا سلسلہ جاری رکھے۔

News Code 1908077

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 9 =