ایران کی دوسری کشتی بھی لبنان پہنچنے والی ہے/ امریکی سفارتخانہ کی اسلامی مزاحمت کے خلاف سازش جاری

حزب اللہ لبنان کے سربراہ سید حسن نصر اللہ نے اسلامی مزاحمت کے ایک کمانڈر کی یاد میں منعقد تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ لبنان میں امریکہ اور سعودی عرب کے تخریبی کردار کا سلسلہ جاری ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے المنار کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ حزب اللہ لبنان کے سربراہ سید حسن نصر اللہ نے اسلامی مزاحمت کے ایک کمانڈر کی یاد میں منعقد تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ لبنان میں امریکہ اور سعودی عرب کے تخریبی کردار کا سلسلہ جاری ہے۔

سید حسن نصر اللہ نے لبنان کی اسلامی مزاحمت کے کمانڈر حاج عباس الیتامی کی شہادت کی یاد میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میں شہید حاج عباس کو قریب سے جانتا ہوں ۔ شہید عباس الیتامی 17 سال کی عمر میں اسلامی مزاحمت کے ساتھ منسلک ہوئے۔ شہید حاج عباس بہت ہی دلیر اور بہادر انسان تھے۔

حزب اللہ کے سربراہ نے کہا کہ امریکہ وہابی تکفیریوں کا حامی ہے اور وہابی تکفیری امریکہ کے حامی ہیں۔ امریکہ لبنان میں اعلانیہ طور پر تکفیریوں کی حمایت کررہا ہے اور تکفیری دہشت گردوں کے خلاف لبنانی حکومت کو کارروائی کرنے سے بھی روک رہا ہے۔ لبنان میں امریکی سفارتخانہ دہشت گردوں کی بھر پور حمایت کررہا ہے۔

سید حسن نصر اللہ نے کہا کہ لبنان میں امریکی اور سعودی عرب کے سفارتخانے داخلی جنگ بھڑکانے کی تلاش و کوشش کررہے ہیں۔ وہ اسلامی مزاحمت کے خلاف دہشت گردوں کی بھر پور مدد کررہے ہیں لیکن اس کے باوجود انھیں لبنان میں شکست اور ناکامی کا سامنا ہے۔

سید حسن نصر اللہ نے کہا کہ امریکہ نے لبنان کے اقتصاد اور معیشت کو نشانہ بنا رکھا ہے۔ لبنان کے داخلی امور میں امریکی سفارتخانہ کی مداخلت نمایاں ہے۔

انھوں نے کہا کہ ایران کی طرف سے دوسری کشتی بھی لبنان پہنچنے والی ہے تیسری کشتی بھی لبنان آئے گی اور جب تک لبنان کو ضرورت ہوگی ایران سے کشتیوں کی آمد کا سلسلہ جاری رہےگا۔ ایران نے ہمیشہ مشکل وقت میں لبنانی عوام اور حکومت کی مدد کی ہے ۔ ایران کی مدد کسی خاص گروہ یا حزب سے مخصوص نہیں ، ایران کی مدد لبنانی قوم سے مختص ہے ایران کی مدد سے لبنانی قوم کو فائدہ پہنچےگا۔

News Code 1907897

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 8 =