قطرمیں افغانستان کی موجودہ صورتحال پر مذاکرات کا آغاز/ افغانستان میں تین دن میں 27 بچے ہلاک

قطر کے دارالحکومت دوحہ میں افغانستان کی صورتحال پر 3 روزہ بات چیت کا آغاز ہوگیا ہے ادھرافغانستان میں گزشتہ 3 روز کے دوران جھڑپوں میں 27 بچے ہلاک اور 136 سے زائد زخمی ہوگئے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے اسپوٹنک کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ قطر کے دارالحکومت دوحہ میں افغانستان کی صورتحال پر 3 روزہ بات چیت کا آغاز ہوگیا ہے۔اطلاعات  کے مطابق افغانستان کے معاملے پر دوحہ اجلاس اقوام متحدہ اور امریکہ کے تعاون سے شروع ہورہا ہے۔ ذرائع کے مطابق اجلاس کا مقصد تشدد میں کمی اور مذاکرات کی بحالی ہے۔ اجلاس میں افغانستان کے قومی مصالحتی کمیشن کے سربراہ عبداللّٰہ عبداللّٰہ اور افغان طالبان کے نمائندے بھی شریک ہوں گے۔ ادھر افغانستان کے ماہرین کا کہنا ہے کہ افغانستان کی موجودہ صورتحال کا اصلی  ذمہ دار امریکہ ہے اور طالبان کی پیشقدمی میں امریکہ کی سازش نمایاں ہے۔ ادھر اقوام متحدہ کا کہنا ہے کہ افغانستان میں گزشتہ 3 روز کے دوران جھڑپوں میں 27 بچے ہلاک اور 136 سے زائد زخمی ہوگئے۔ اقوام متحدہ کے ادارے یونیسیف کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ افغانستان میں گزشتہ 3 روز سے جاری لڑائی میں اب تک 27 بچے ہلاک اور 136 سے زائد زخمی ہوچکے ہیں، صرف قندھار میں لڑائی کے دوران 20 بچے مارے گئے جب کہ 130 کے قریب زخمی ہوئے، اس کے علاوہ خوست اور پکتیا میں 7 بچے ہلاک ہوگئے ہیں۔ طالبان کے ظلم و ستم میں روز بروز اضافہ ہورہا ہے۔

News Code 1907732

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 8 =