پاکستان نے افغان سفارتخانے اورقونصلیٹ کی سکیورٹی مزید سخت کردی

پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے افغان سفیر کی بیٹی کے کیس کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ افغان سفارتخانے اور قونصلیٹ کی سکیورٹی مزید سخت کردی ہے۔ افغان ہم منصب کو یقین دلایا ہے کہ حکومت پاکستان واقعے کی مکمل تحقیقات کرے گی۔

مہر خبررساں ایجنسی نے جنگ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے افغان سفیر کی بیٹی کے کیس کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ افغان سفارتخانے اور قونصلیٹ کی سکیورٹی مزید سخت کردی ہے۔ افغان ہم منصب کو یقین دلایا ہے کہ حکومت پاکستان واقعے کی مکمل تحقیقات کرے گی۔

اطلاعات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کے مشیر قومی سلامتی معید یوسف اور آئی جی اسلام آباد کے ہمراہ پریس کانفرنس میں شاہ محمود قریشی نے کہا کہ حکومت پاکستان نے افغان سفیر کی بیٹی کے کیس کی تحقیقات مکمل کرلی ہیں، دستیاب شواہد کی بنا پر اغوا کیے جانے کا تاثر غلط ہے۔

وزیر خارجہ نے مزید کہا کہ ہم نے تصدیق کرلی ہے کہ افغان سفیر کی بیٹی گھر سے نکل کر کہاں کہاں گئی، ہم نے کچھ نوٹس افغان وزیر خارجہ سے شیئر کیے ہیں۔

اُن کا کہنا تھاکہ افغان ہم منصب کو 16 جولائی کو پیش آئے واقعے پر اب تک کے اقدامات سے آگاہ کیا ہے، اب پاکستان کو افغانستان کی طرف سے تعاون کی ضرورت ہے۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان معاملے کو ذاتی طور پر دیکھ رہے ہیں، افغان سفارتخانے اور قونصلیٹ کی سکیورٹی مزید سخت کردی گئی ہے۔ قریشی نے کہا کہ ملزمان کو گرفتار کرکے کیفر کردار تک پہنچایا جائےگا۔

انہوں نے کہاکہ ہم افغانستان کے ساتھ اپنے رابطے کو برقرار رکھنا چاہتے ہیں، ہم نے کابل سے کہا ہےکہ وہ سفیر کی واپسی کے فیصلہ پر نظر ثانی کریں۔

News Code 1907437

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 0 =