اسلام آباد میں افغان سفیر کی بیٹی پر تشدد / پاکستانی سفیر کابل میں وزارت خارجہ میں طلب

پاکستان کے دارالحکومت اسلام آباد میں افغان سفیر کی بیٹی کو تشدد اور اغوا کرنے کی کوشش کی گئی جس پر افغانستان کی وزارت خارجہ نے کابل میں پاکستانی سفیر کو طلب کرکے احتجاج کیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے طلوع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کے دارالحکومت اسلام آباد میں افغان سفیر کی بیٹی کو تشدد اور اغوا کرنے کی کوشش کی گئی جس پر افغانستان کی وزارت خارجہ نے کابل میں پاکستانی سفیر کو طلب کرکے احتجاج کیا ہے۔

افغانستان کی وزارت خارجہ نے پاکستان میں تعینات افغان سفیر کی بیٹی کے اغوا اور تشدد کی مذمت  کی ، افغانستان کی وزارت خارجہ نے کابل میں پاکستانی سفیر منصور احمد خان کو طلب کر کے اسلام آباد میں افغان سفیر کی بیٹی کے اغوا  اور تشدد پر احتجاج ریکارڈ کرایا  اور انہیں کہا گیا کہ افغان وزارت خارجہ کا احتجاج پاکستانی حکومت کو فوری  پہنچایا جائے۔

ہفتہ کے روزجاری کردہ بیان میں افغان وزارت خارجہ کا کہنا تھا کہ سفیر کی بیٹی سلسلہ علی خیل کو جمعہ 16 جولائی کو اغوا کر کے کئی گھنٹوں تک محبوس رکھا گیا جو  اس وقت طبی نگہداشت کے لیے ہسپتال میں داخل ہیں۔

افغان وزارت خارجہ  نے پاکستان سے واقعہ میں ملوث مجرموں کو فورا کو گرفتار اور سزا دینے کا مطالبہ کیا  اور کہا کہ افغان وزارت خارجہ پاکستان سے بین الاقوامی قوانین کے مطابق پاکستان میں موجود افغان سفارت کاروں کو سکیورٹی اور تحفظ کو یقینی بنایا جائے۔

ادھر پاکستانی وزیر اعظم عمران خان نے واقعہ میں ملوث افراد کو فوری طور پر گرفتار کرنے کا حکم دیتے ہوئے وزیر داخلہ کو 48 گھنٹوں ميں رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کی ہے۔

News Code 1907412

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 2 =