افغانستان حکومت کا بھارت سے فوجی امداد طلب کرنے کا عندیہ

نئی دہلی میں افغانستان کے سفیرنے کہا ہے کہ اگرافغانستان حکومت کی طالبان کے ساتھ بات چیت ناکام ہوجاتی ہے توضرورت پڑنے پروہ بھارت سے فوجی امداد طلب کرسکتا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے بھارتی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ  نئی دہلی میں افغانستان کے سفیر فرید ماموند زئی نے کہا ہے کہ اگرافغانستان حکومت کی طالبان کے ساتھ بات چیت ناکام ہوجاتی ہے توضرورت پڑنے پروہ بھارت سے فوجی امداد طلب کرسکتا ہے۔ نئی دہلی میں افغان سفیرفرید ماموند زئی نے کہا ہے کہ افغانستان میں اس وقت حالات بہت خراب ہو چکے ہیں، موجودہ حالات بہت ہی خوفناک ہو چکے ہیں، حکومتی فورسزاس وقت ملک کے 376 اضلاع میں سے تقریبا 150 میں طالبان کے ساتھ برسرپیکار ہیں، اگرافغانستان حکومت کے طالبان کے ساتھ مذاکرات ناکام ہوجاتے ہیں تووہ بھارت سے عسکری امداد طلب کرسکتا ہے۔

افغان سفیر نے کہا کہ ایسی صورت میں افغان فضایہ کو بھارت کی مدد کی ضرورت ہوگی، بھارت نے ہمیں پہلے ہی سے تقریبا ایک درجن ہیلی کاپٹرز فراہم کیے تھے تاہم افغان پائلٹس کو ٹریننگ کی ضرورت ہوگی اوربھارت اپنے ملک میں افغان فوجیوں کوبہترتربیت فراہم کرسکتا ہے۔

News Code 1907385

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 13 =