امریکہ نے افغانتسان میں صرف تباہی اور بربادی مچائی اور دہشت گردی کو فروغ دیا

افغانستان کے سابق صدر حامد کرزائی نے افغانستان سے امریکی فوج کے انخلا کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ 20 سال پوری طاقت کے ساتھ یہاں رہنے کے باوجود اپنے مقاصد حاصل نہیں کرسکا اور ناکام واپس لوٹ رہا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے اے پی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ افغانستان کے سابق صدر حامد کرزائی نے افغانستان سے امریکی فوج کے انخلا کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ 20 سال پوری طاقت کے ساتھ یہاں رہنے کے باوجود اپنے مقاصد حاصل نہیں کرسکا اور ناکام واپس لوٹ رہا ہے۔ 

افغانستان کے سابق صدر حامد کرزائی نے افغانستان سے امریکی فوجیوں کے انخلا اور اس کے بعد پیدا ہونے والی صورت حال پر کھل کر اپنے تحفظات اور خدشات کا اظہار کیا۔

افغانستان کے سابق صدر نے کہا کہ دہشت گردی کے خاتمے اور استحکام کا ہدف لے کر افغانستان آنے والا امریکہ 20 سال بعد بھی اپنے مقاصد حاصل کرنے میں ناکام رہا ہے اور اس نے صرف دہشت گردی کو فروغ دیا ۔

حامد کرزائی نے مزید کہا کہ افغانستان سے واپس جانے والی امریکی فوج نے اپنی میراث میں صرف تباہی ،  شرمندگی اور بربادی چھوڑی ہے تاہم اچھی بات یہ ہے کہ افغان عوام اب متحد ہیں اور امن کی خواہش رکھنے والے افغانیوں کو اپنے مستقبل کی ذمہ داری خود اُٹھانا چاہیے۔

افغان صدر نے کہا کہ افغان عوام امریکی فوج کی موجودگی کے بغیر ہی بہتر تھے۔ غیر ملکی فوجیوں کی موجودگی نے ہمیں وہی کچھ دیا ہے جو اس وقت ہمارے پاس ہے اس لیے افغانستان کے لیے بہتر ہے کہ امریکی فوجی واپس چلے جائیں۔

News Code 1907075

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 9 =