فرانس کے صدر میکرون کو ایک نوجوان نے زوردار تھپڑ رسید کردیا

فرانس میں صدر ایمانوئیل میکرون کو ایک فرانسیسی نوجوان نے سب کے سامنے زور دار تھپڑ رسید کردیا۔

مہر خبررساں ایجنسی نے فرانسیسی خبررساں ایجنسی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ فرانس میں صدر ایمانوئیل میکرون کو ایک  فرانسیسی نوجوان نے سب کے سامنے زور دار تھپڑ رسید کردیا۔

اطلاعات کے مطابق فرانس کے صدر ایمانوئیل میکرون کورونا وائرس میں کمی کے بعد کاروباری سرگرمیاں بحال ہونے پر جنوب مشرقی علاقے ڈروم کے دورے پر تھے جہاں انہوں نے ریستورانوں کے مالکان اور طلبا سے ملاقات کی تھی۔

ایمانوئیل میکرون جیسے ہی ایک عمارت سے باہر نکلے تو سامنے موجود افراد نے تالیاں بجا کر ان کا استقبال کیا جس پر صدر نے آگے بڑھتے ہوئے ٹی شرٹ پہنے اور ماسک لگائے نوجوان سے ہاتھ ملایا۔

نوجوان نے ہاتھ ملاتے ہی صدر ایمانوئیل میکرون کے منہ پر تھپڑ رسید کردیا۔ صدر اس اچانک حملے سے گھبرا کر حواس باختہ ہوگئے۔ سکیورٹی اہلکاروں نے فوراً صدر کو نوجوان سے دور کیا۔ اس دوران وہ نوجوان میکرون اور ان کی پالیسیوں کے خلاف نعرے لگاتا رہا۔

پولیس نے صدر ایمانوئیل میکرون کو تھپڑ مارنے کے جرم میں دو افراد کو حراست میں لے لیا ہے تاہم ان کی شناخت ظاہر نہیں کی گئی ہے۔ پولیس نے تحقیقات کا آغاز کردیا ہے۔

News Code 1906859

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 10 =