روسی حکام کا کورونا ویکسین کے حوالے سے یورپی یونین پر الزام عائد

روسی حکام نے الزام عائد کیا ہے کہ یورپی یونین نے انسانیت پر سیاسی اختلاف کو فوقیت دیتے ہوئے روسی ساختہ کرونا ویکسین کے استعمال کی اجازت نہیں دی۔

مہر خبررساں ایجنسی نے روسیا الیوم کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ روسی حکام نے الزام عائد کیا ہے کہ یورپی یونین نے انسانیت پر سیاسی اختلاف کو فوقیت دیتے ہوئے روسی ساختہ کرونا ویکسین کے استعمال کی اجازت نہیں دی۔ روس کی فیڈرل ایجنسی برائے بین الاقوامی انسان دوست تعاون اور دولت مشترکہ کے آزادانہ امور کے سربراہ ییوجینی پریماکوف نے ان خیالات کا اظہار سینٹ پیٹرز برگ انٹرنیشنل اکنامک فورم کے تحت عالمی وبائی امور کے عنوان سے منعقدہ اجلاس میں کیا۔

انہوں نے کہا کہ روس پر سیاسی دباؤ اب بھی بنانے کی کوشش کی جارہی ہے اور ہم اس حقیقت کو دیکھ سکتے ہیں کیوں کہ یورپی یونین نے ابھی تک روس کی تیار کردہ اسپوٹنک وی ویکسین کے استعمال کی منظوری نہیں دی ہے۔

پریماکوف کا کہنا تھا کہ یورپی یونین نے سیاسی اختلافات کو ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے روسی ویکسین کے استعمال کی اجازت روکی اور بعد میں تیار ہونے والی امریکی و برطانوی ویکسین فائزر، اسٹرازینیکا اور دیگر ویکسینز کے استعمال کی اجازت دے دی۔

روسی حکام نے عالمی ادارہ صحت پر بھی الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ ڈبلیو ایچ او نے بھی دیگر تمام ویکسینز کو تسلیم کرلیا لیکن دنیا کی سب سے پہلی کورونا ویکسین جو روس میں تیار کی گئی اسے ابھی تک تسلیم نہیں کیا۔

News Code 1906830

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 6 + 12 =