نیپالی صدرنے ایک بار پھر پارلیمنٹ تحلیل کردی

نیپالی صدر بدیا دیوی بھنڈاری نے وزیراعظم اور اپوزیشن لیڈر کی جانب سے اکثریت ثابت کرنے میں ناکامی پر ایک بار پھر پارلیمنٹ تحلیل کردی۔

مہر خبررساں ایجنسی نے غیر ملکی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ نیپالی صدر بدیا دیوی بھنڈاری نے وزیراعظم اور اپوزیشن لیڈر کی جانب سے اکثریت ثابت کرنے میں ناکامی پر ایک بار پھر پارلیمنٹ تحلیل کردی۔

اطلاعات کے مطابق نیپال میں عبوری وزیراعظم کے پی شرما اولی پارلیمنٹ میں اکثریت ثابت کرنے میں ناکام رہے ہیں جب کہ اپوزیشن لیڈر کو بھی اکثریت حاصل نہیں ہوسکی جس کی وجہ سے نیپالی صدر نے پارلیمنٹ تحلیل کردی۔

نیپال کی صدر بدیا دیوی نے اسمبلی کی تحلیل کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ عبوری وزیراعظم مقررہ وقت میں حکومت بنانے کے لیے درکار اکثریت حاصل نہیں کرسکے اس لیے اب نئے انتخابات کا پہلا مرحلہ 12 نومبر جب کہ دوسرا مرحلہ 19 نومبر کو ہو گا۔

صدر بدیا دیوی کی جانب سے جاری بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ اسمبلی کی تحلیل اور نئے انتخابات کا فیصلہ عبوری وزیراعظم کی سربراہی میں قائم کابینہ کی سفارش پر کیا گیا ہے۔ نیپال میں حال ہی میں نئے انتخابات ہوئے تھے تاہم کوئی حکومت بنانے کے لیے درکار اکثریت حاصل نہیں کرسکا تھا۔

News Code 1906627

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 9 =