عالمی برادری کو اسرائیلی وحشیانہ حملوں کو متوقف کرنے میں اپنا کردار ادا کرنا چاہیے

اسلامی جمہوریہ ایران کی وزارت خارجہ نے اپنے ایک بیان میں غزہ پر نہتے فلسطینیوں پر اسرائیلی جنگی طیاروں کی وحشیانہ بمباری کی مذمت کرتے ہوئے زوردیا ہے کہ عالمی برادری اور حکومتوں کو فلسطین پر اسرائیل کے وحشیانہ حملوں کو متوقف کرنے کے سلسلے میں اپنا کردار ادا کرنا چاہیے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کی وزارت خارجہ نے اپنے ایک بیان میں غزہ پر نہتے فلسطینیوں پر اسرائیلی جنگی طیاروں کی وحشیانہ بمباری کی مذمت کرتے ہوئے زوردیا ہے کہ تمام حکومتوں کو فلسطین پر اسرائیل کے وحشیانہ حملوں کو متوقف کرنے کے سلسلے میں اپنا کردار ادا کرنا چاہیے۔

ایرانی وزارت خارجہ نے اپنے بیان میں اسرائیل کے منحوس وجود کے قیام اور فلسطینیوں کیم زاحمت اور استقامت کی طرف اشارہ اور مسجد الاقصی اور غزہ پر اسرائیل کے مظالم  اور مجرمانہ اقدامات کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ  عالمی اداروں اور حکومتوں کو فلسطین کے سلسلے میں اپنی ذمہ داریوں پر عمل کرنا چاہیے۔ انھوں نے کہا کہ اسرائیل فلسطینیوں کی نسل کشی کررہا ہے اور اسرائیل کے مجرمانہ اقدامات پر عالمی برادری کا سکوت شرم آور ہے۔ ایرانی وزارت خارجہ کے بیان کے مطابق 73 سال قبل 4 مئی 1948 میں فلسطینی مسلمانوں کو اپنے گھروں اور وطن  سے نکال کر ان کے گھروں اور وطن میں ادھر ادھر سے لاکر اسرائیلیوں کو آباد کیا گیا اور گذشتہ 73 سال سے فلسطینیوں پر اسرائیل اور اس کے حامیوں کا ظلم و ستم جاری ہے۔  ایرانی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ اسرائیل کوئی ملک نہیں بلکہ خطے اور مشرق وسطی میں امریکہ کی جعلی ، غیر قانونی اور  دہشت گردانہ فوجی چھاؤنی ہے جس کا خاتمہ فلسطینیوں اور علاقائی عوام کی سالمیت کے لئے بہت ضروری ہے۔

ایرانی وزارت خارجہ نے اپنے بیان میں فلسطینیوں کی ہر لحاظ سے حمایت جاری رکھنے کے عزم کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایران تمام فلسطینیوں کی وطن واپسی اور بیت المقدس کی آزادی تک فلسطینیوں کے ساتھ کھڑا رہےگا اور ایران کو فلسطینیوں کی حمایت پر فخر حاصل ہے۔

News Code 1906513

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 1 =