افغانستان کے ساتھ دوستی اور دشمنی کا فیصلہ پاکستان کے ہاتھ میں ہے

افغانستان کے صدر اشرف غنی نے کہا ہے کہ افغانستان سے غیر ملکی افواج کا انخلا اس بات پر منحصر ہے کہ پاکستان اپنے ہمسائہ ملک افغانتسان کے ساتھ دوستی کرتا ہے یا دشمنی کا فیصلہ کرتا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ڈیلی پاکستان کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ افغانستان کے صدر اشرف غنی نے کہا ہے کہ افغانستان سے غیر ملکی افواج کا انخلا اس بات پر منحصر ہے کہ پاکستان اپنے ہمسائہ ملک افغانتسان  کے ساتھ دوستی کرتا ہے یا دشمنی کا فیصلہ کرتا ہے۔ پولیس فورس کے ارکان سے خطاب کرتے ہوئے افغان صدر نے کہا کہ غیر ملکی افواج کے انخلا کے اعلان کے ساتھ افغانستان کو تاریخی موقع ہاتھ آیا ہے۔ "آج پاکستان کیلئے فیصلے کا دن ہے، اگر ہمارا ملک غیر مستحکم ہوا تو پاکستان بھی عدم استحکام کا شکار ہوگا، اگر وہ (پاکستان) ہماری ترقی چاہتے ہیں تو ان کی بھی ترقی ہوگی۔" اشرف غنی نے کہا کہ دوستی اور دشمنی کا فیصلہ پاکستان کے ہاتھ میں ہے۔

انہوں نے اسی قسم کے ریمارکس جمعرات کو ایک آن لائن کانفرنس سے خطاب میں بھی دیےتھے۔ اشرف غنی کا کہنا تھا " پاکستان کیلئے یہ قسمت کا فیصلہ ہے، یا تو وہ (پاکستان) مشترکہ طور پر علاقائی تعاون، عالمی پارٹنر شپ اور خطے کا استحکام چاہے گا یا پھر وہ اپنی توانائیاں طالبان اور انتہا پسندی کو مضبوط کرنے میں صرف کرے گا، پاکستان کو انتہا پسندی کی سب سے زیادہ قیمت ادا کرنا پڑی ہے، یہ فیصلے کی گھڑی ہے اور ہمیں یہ سب دیکھنا ہوگا " ۔

News Code 1906165

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 4 =