افغان طالبان نے ترکی میں افغانستان سے متعلق اجلاس میں شرکت سے انکار کردیا

افغانستان میں قیام امن اور فریقین کے درمیان تصفیے کے لیے ترکی میں 16 اپریل کو ہونے والے اجلاس میں طالبان نے شرکت سے انکار کردیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے افغان میڈیا کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ افغانستان میں قیام امن اور فریقین کے درمیان تصفیے کے لیے ترکی میں  16 اپریل کو ہونے والے اجلاس میں طالبان نے شرکت سے انکار کردیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق طالبان کے ترجمان محمد نعیم نے اپنے ایک بیان میں ترکی سمٹ میں شرکت سے انکار کرتے ہوئے کہا ہے کہ افغانستان سے امریکی فوجیوں کے انخلا سے قبل کسی قسم کے مذاکرات کی گنجائش نہیں۔

ترجمان محمد نعیم نے مزید بتایا کہ 16 اپریل کو ترکی کانفرنس سے متعلق دستاویزات کا جائزہ لیا ہے اور ایسا محسوس ہوتا ہے کہ اس سمٹ میں شرکت مفید ثابت نہیں ہوگی تاہم اس کے بارے میں حتمی فیصلے سے جلد آگاہ کردیا جائے گا۔

ادھر ایک طالبان کمانڈر کا کہنا ہے کہ جب تک افغانستان سے امریکی افواج کے انخلا کا معاملہ واضح نہیں ہوجاتا، معاملات آگے نہیں بڑھیں گے۔ ہماری اولین ترجیح امریکی فوجیوں کا انخلا ہے۔

اطلاعات کے مطابق افغانستان میں امریکا کے خصوصی نمائندے زلمے خلیل زاد کابل کا چار روزہ دورہ مکمل کر کے واپس امریکہ روانہ ہوگئے۔ دورے کے دوران انہوں نے سیاسی رہنماؤں، سول سوسائٹی اور نوجوانوں سے ملاقاتیں کیں۔

News Code 1906069

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 1 =